آئی ایم ایف کا پاکستان کو کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کم کرنے پر زور

آئی ایم ایف کا پاکستان کو کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کم کرنے پر زور

واشنگٹن: عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) نے پاکستان پر زور دیا ہے کہ اپنے کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ قابو میں لائیں جبکہ وزیراعظم شہباز شریف کی حکومت آئی ایم ایف کے ساتھ پروگرام میں اضافہ اور توسیع کی خواہاں ہے۔

خبرایجنسی رائٹرز کی رپورٹ کے مطابق آئی ایم ایف کے مشرق وسطیٰ اور وسطی ایشیا ڈپارٹمنٹ کے ڈائریکٹر جیہاد آزور نے بتایا کہ ہماری ٹیم نئی حکومت کی پالیسی ترجیحات اور یوکرین کی جنگ کی روشنی میں معیشت پر پڑنے والی اثرات کا جائزہ لے گی۔

ان کاکہنا تھا کہ لیکن ہم گزشتہ چند مہینوں سے کرنٹ اکاؤنٹ کی صورت حال قابو میں رکھنے اور کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کم کرنے کی اہمیت اجاگر کرتے رہے ہیں۔

انہوں نے پالیسی ایکشنز پر وضاحت نہیں دی لیکن آئی ایم ایف نے اس سے پہلے کہا تھا کہ مارکیٹ کا طے کردہ ایکسچینج ریٹ اور مؤثر میکر اکنامک پالیسی کے تسلسل سے خسارہ کم کرنے میں مدد ملے گی۔

خیال رہے کہ پاکستان کا کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ رواں مالی سال کے 9 ماہ میں 13.2 ارب ڈالر تک بڑھ گیا ہے، جس میں ایک برس قبل تیل کی درآمدی قیمتوں کے بڑھنے سے پہلے 27 کروڑ 50 لاکھ ڈالر کا فرق تھا۔

ریٹنگ ایجنسی موڈیز کی پیش گوئی ہے کہ خسارہ 30 جون کو رواں مال کے اختتام تک گراس ڈومیسٹک پروڈکٹ کی 5 سے 6 فیصد تک بڑھ جائے گا، جس کے بارے میں پہلے 4 فیصد کی پیش گوئی تھی اور اس سے پاکستان کے ذخائر پر دباؤ میں مزید اضافہ ہوجائے گا۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *