استاد قاری محمد صدیق منشاوی

استاد قاری محمد صدیق منشاوی ایک مشہور معروف قاری قرآن تھے ۔ ان کی ولادت ۱۹۲۱ء، ۹۴سال پہلے مصر کے شہر منشاہ میں ہوئی۔ انہوں نے ایک مذہبی گھرانے میں آنکھ کھولی۔ ان کے والد گرامی صدیق منشاوی ایک صوفی منش قاری تھے اور انہوں نے کبھی بھی تلاوت ِ قرآن کی اجرت وصول نہیں کی ۔ اور انہی اصولوں پر انہون نے اپنے بیٹے محمد کی پرورش اور تربیت کی۔شیخ صدیق منشاوی کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ ایک متقی اور پرہیز گار انسان تھے۔ محمد صدیق نے اپنے باپ کی ترغیب اور تشویق کے نتیجے میں قرآن کریم کی تعلیم حاصل کرنا شروع کی اور ابتداءہی سے حفظ قرآن شروع کر دیا اور نو سال کی عمر میں محمد صدیق منشاوی ماہ مبارک رمضان کی راتوں میں قرآن کریم کی محفلوں میں حاضر ہوتے اور تلاوت قرآن پاک کا شرف حاصل کرتے۔ یہ سلسلہ ان کی جوانی تک رہا یہاں تک کہ مصر کے عربی ریڈیو میں ان کی جوانی تک رہا ۔ اور اسطرح ان کی شہرت میں اضافہ ہوتا گیا اور وہ ایک مشہور و معروف مصر کے قراءمیں سے شمار ہوتے ہیں محمد صدیق منشاوی متاخرین میں بے نظیر اور متقدمین میں کم نظیر شخصیت ہیں وہ جہاں اسلام کی معروف شخصیت ہیں اور قرآن کریم کے کئی الحان کے موجد اور مبتکر ہیں۔روش تلاوت ، بہترین ، آواز ، لحن کرم اور خربن لہجہ اور صحیح تلفظ اور کلمات کا بہترین بیان محمد صدیق منشاوی کی خصوصیات میں سے ہے۔ وہ اپنی تلاوت کے ذریعے سامعین کو عجیب انداز میں آیات الہی کی طرف متوجہ کر دیتے ہیں۔ ان کا قرائت ھفت گانہ اور دھگانہ اور رویان ِ قرائت کے عظیم استاتذہ میں شمار ہوتے ہیں۔ پوری دنیامیں ان کے حق کا اعتراف کیا جاتا ہے ۔ محمد صدیق منشاوی نے دنیا کے کئی ممالک کا دورہ کیا ۔ مساجد اور دینی مراکز میں تلاوت کلام الہی کا شرف حاصل کیا آخرکار وہ ۴۹سال کی عمر میں ۱۹۷۱ء ق قاہرہ شہر میں دارفانی سے دار بقاءکی طرف کوچ کر گئے ۔ آج وہ اس دنیا میں موجود نہیں ہیں ۔تاہم ان کی تلاوتیں آج بھی محفلیں اور مجالس کو زینت بخش رہی ہیں۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *