سوئی سدرن کی یقین دہانی کے باوجود مطلوبہ پریشر فراہم نہیں کیا جارہا، ماہین سلمان

کراچی ( ) کورنگی ایسو سی ایشن آف ٹریڈ اینڈ انڈسٹری (کاٹی) کی قائم مقام صدر ماہین سلمان نے کورنگی صنعتی علاقے میں برآمدی صنعت سمیت تمام انڈسٹری کو گیس کی سپلائی متاثر ہونے پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سوئی سدرن گیس کمپنی نے بشمول کاٹی تمام صنعتی ایسوسی ایشنز کو یقین دہانی کرائی تھی کہ ہفتہ میں 4 دن گیس کی بلا تعطل فراہمی کی جائے گی، پھر ایک دن کا ناغہ ہوگا اور پھر مزید 4 دن گیس فراہم کی جائے گی۔ تمام ایسو سی ایشنز اس پر بھی متفق تھیں کہ باری باری تمام ایسو سی ایشنز میں گیس سپلائی کی جائے اور ناغہ کے دن بھی طے کئے گئے تھے۔

مزید پڑھیں: تحریک انصاف نے 65 اکاونٹس چھپائے، عطیات بھی غلط بتائے،سکروٹنی کمیٹی کی رپورٹ

اس کے علاوہ اسٹیگرینگ کے معاہدے کے تحت ایس ایس جی سی نے یہ بھی یقین دہانی کرائی تھی کہ جن صنعتوں کے گیس کنیکشن منقطع کئے گئے تھے وہ بھی بحال ہوں گے۔ قائم مقام صدر کاٹی نے کہا کہ سوئی سدرن گیس انتظامیہ کی جانب سے یہ بھی طے کیا گیا تھا کہ ناغہ والے دنوں میں اس علاقے کا پریشر بند کردے جس سے اسٹیگرینگ کے معاہدے کو مؤثر بنایا جاسکتا ہے۔ تاہم ایس ایس جی سی معاہدے کے ابتداء میں ہی گیس کی بلا تعطل فراہمی ممکن نہ بنا سکی۔

ماہین سلمان کا کہنا تھا کہ گیس کی کمی کے خاتمے کے لئے بروقت اقدامات کرنے کے بجائے حکومت کی جانب سے آر ایل این جی کے معاہدوں میں بھی تاخیر کی گئی جس سے معاملہ مزید سنگین صورتحال اختیار کرگیا ہے۔ قائم مقام صدر کاٹی نے کہا گیس کے مسائل کے باعث مقامی اور برآمدی صنعتی پیداوار بری طرح متاثر ہورہی ہے اور خدشہ ہے کہ مقامی صنعتی پیداوار میں کمی اور برآمداتی اہداف حاصل کرنا بہت مشکل ہو جائے گا۔

مزید پڑھیں: بگ بیش میں حارث رؤف نے ناقابل یقین کیچ پکڑ کر سب کو حیران کردیا

انہوں نے حکومت اور وزارت پیٹرولیم و گیس سے مطالبہ کیا کہ گیس کی سپلائی کو بحال کیا جائے، صنعتکار حکومت سے گیس مینجمنٹ پلان پر تعاون کیلئے تیار ہیں لیکن یقین دہائی کرائے گئے دنوں میں گیس کی بلا تعطل فراہمی کی جائے تاکہ انڈسٹری بروقت پیداوار مکمل کرسکے۔

انہوں نے امید ظاہر کی کہ حکومت صنعتکاروں کو سہولیات فراہم کرنے میں سنجیدگی سے بروقت اقدامات کرے گی تاہم گیس پریشر میں کمی سے متعلق اس مسئلہ کا بھی جلد کوئی حل تلاش کیا جائے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *