صوبائی وزیرمحکمہ آبپاشی جام خان شورو کی زیر صدارت بیراج امپرومنٹ پروجیکٹ کے متعلق اجلاس

کراچی : صوبائی وزیر برائے محکمہ آبپاشی جام خان شورو نے آج سندھ بیراج امپرومنٹس پروجیکٹ کے متعلق ورلڈ بینک کے نمائندوں اورمحکمے آبپاشی کے افسران کے ساتھ اپنے دفتر میں ایک اعلیٰ سطحی اجلاس کی صدارت کی ۔اجلاس کے دوران محکمہ آبپاشی کے متعلقہ افسران نے سکھر اور گڈو بیراجوں کی مرمت اور بحالی پر ورلڈ بینک کے ٹیم لیڈر فرانسیو کو بریفنگ دیتے ہوئے منصوبے کے مختلف پہلوؤں پر انہیں آگاہ کیا۔

اس موقع پر صوبائی سیکرٹری آبپاشی سہیل احمد قریشی اور سکھر، گڈو اور کوٹری بیراجز کے چیف انجینئرز اور دیگر افسران بھی موجود تھے۔ صوبائی وزیر برائے محکمہ آبپاشی جام خان شورو نے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہا کہ سکھر اور گڈو بیراجز صوبہ سندھ کے آبپاشی نظام میں بہت اہمیت کے حامل ہیں لیکن کئی دہائیوں سے ان بیراجوں کی مرمت اور بحالی کا کام نہیں کیا گیا اس مقصد کیلئے سندھ حکومت اور ورلڈ بینک کے مابین بیراج امپرومنٹس پروجیکٹ کے تحت سکھر اور گڈو بیراجوں کی مرمت، بحالی اور حفاظت کے منصوبے پر غور جاری ہے جس پر آج کا اجلاس منعقد کیا گیا۔

انہوں نے کہاکہ سندھ بیراج امپرومنٹس پروجیکٹ کے حوالے سے ورلڈ بینک کی بتائی گئی تجاویز اور سفارشات پر سندھ کابینہ اور تمام اسٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لیا جائیگا تاکہ گڈو اور سکھر بیراجوں کی بحالی، مرمت اور حفاظت کو یقینی بنایا جاسکے، صوبائی وزیر برائے محکمہ آبپاشی جام خان شورو بتایا کہ سندھ حکومت صوبائی واٹر پالیسی کو بنانے اور اس پر سنجیدگی سے عملدرآمد کرکے پانی کے تمام مسائل حل کرنے کیلئے کوشاں ہے اس ضمن میں محکمہ آبپاشی کی جانب سے واٹر پالیسی پربھی کام کیا جارہا ہے جس کو سندھ کابینہ کی منظوری کے بعد رائج کیا جائے گا۔

انہوں نے ورلڈ بینک کے ٹیم لیڈر فرانسیو کو کہا کہ وہ محکمہ آبپاشی کا نظام بہتر بنانے کے خواں ہیں اور بیراج امپرومنٹس پروجیکٹ کے تناظر میں ورلڈ بینک کی سفارشات اور تجاویز پر بھی غور کررہے ہیں تاہم اس کیلئے وقت درکار ہوگا تاکہ تمام اسٹیک ہولڈرز اور کابینہ کی منظوری کے بعد اس منصوبے پر جلد کام شروع کیا جائیگا۔اس سلسلے میں محکمہ آبپاشی کے افسران پر مشتمل ایک کمیٹی تشکیل دی گئی جو کہ ورلڈ بینک کے سفارشات کا جائزہ لیکر اپنی رپورٹ پیش کرے گی۔

صوبائی وزیر جام خان شورو نے اجلاس میں مزید بتایا کہ گزشتہ دن صوبائی اسمبلی میں جلالپور اور تھل کینال کے مقام پر چوبارہ واٹر کینالز کی تعمیر کی خلاف قرارداد پیش کرکے وفاقی حکومت سے ان دونوں منصوبوں پر کام روکنے اور منظوری نہ دینے کا مطالبہ کیا گیاہے۔

اس موقع پر ورلڈ بینک کے ٹیم لیڈر فرانسیو نے ورلڈ بینک کی جانب سےسکھر اور گڈو بیراج کی بحالی حفاظت اور مرمت کے ساتھ محکمہ آبپاشی کے افسران کی تربیت کے حوالے سے اپنےمکمل تعاون کی یقین دہانی کروائے۔بعد ازیں، پیپلز پارٹی بلوچستان کے صدر چنگیز خان جمالی نے صوبائی وزیر برائے محکمہ آبپاشی جام خان شورو کے ساتھ ملاقات کی ۔

ملاقات کے دوران دونوں رہنماؤں کے درمیان سندھ بلوچستان پانی مسائل پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا اس موقع پر صوبائی وزیر آبپاشی نے انہیں بلوچستان کے پانی مسائل کے حل اور ساتھ کیلئے یقین دہانی کروائے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *