سینئر صحافیوں عظمت خان اور شہزاد ملک کو دھمکیوں کی مذمت کرتے ہیں : KUJ اور RIUJ

کراچی : کراچی یونین آف جرنلسٹس دستور کے صدر راشد عزیز ، سیکریٹری موسیٰ کلیم اور دیگر عہدیداران نے کراچی یونین آف جرنلسٹس دستور کے رکن اور  سینئر صحافی عظمت خان (عظمت علی رحمانی )کو ملنے والی دھمکیوں کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے ۔

کراچی یونین آف جرنلسٹس دستور آزادی اظہار رائے کے فلسفے پر عمل پیرا ہے ۔ اپنے صحافتی کاموں کی ادائیگی کے دوران عظمت خان کو قتل کی سنگین دھمکیاں دی گئیں ۔ یہ پہلا موقع نہیں کہ صحافیوں کو دھمکایا جائے ۔

کے یو جے کے رہنمائوں کا کہنا ہے کہ اس سے قبل بھی ایسے واقعات رونما ہو چکے ہیں ۔ حکومت سے مطالبہ ہے کہ عظمت خان کو دھمکیاں دینے والے عناصر کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے اور عظمت خان کو تحفظ فراہم کیا جائے ۔

واضح رہے کہ 8 ستمبر 2021 کو ہری پور نعیم خان کالونی میں ہونے والی ایک قتل کی واردات میں ملزمان کی شناخت اور قتل کا پردہ فاش کرنے پر سینئر رپورٹر کو قتل اور جان سے مارنے کی دھمکیاں دی جا رہی ہیں ۔ ان دھمکیوں میں ہر گزرتے دن کے ساتھ اضافہ ہوتا جا رہا ہے ۔

دوسری جانب راولپنڈی اسلام آباد یونین آف جرنلسٹس کی جانب سے بھی ایک اعلامیہ جاری کیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ سینئر صحافی شہزاد ملک کو دی جانے والی دھکمیوں کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں ۔

راولپنڈی اسلام آباد یونین آف جرنلسٹس نے صحافی شہزاد ملک اور آن لائن نیوز ایجنسی کے رپورٹر کو اپنے کزن شیزار کے قاتلوں کو نے نقاب کرنے پر قاتلوں کی جانب سے دی جانے والی قتل کی دھمکیوں کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے ۔اور آئی جی خیبر پختون خواہ سے مطالبی کیا ہے کہ شہزاد ملک کی جان و مال کو تحفظ فراہم کیا جائے ۔

آر آئی یو جے کے صدر عامر سجاد سید ، جنرل سیکرٹری طارق علی ورک اور مجلس عاملہ کے اراکین نے کہا ہے کہ صحافیوں کو آئے روز تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے اور جان سے مارنے کی دھمکیاں دی جاتی ہیں ۔ لیکن موجودہ حکومت صحافیوں کو تحفظ دینے کے لیئے کوئی اقدامات نہیں کر رہی ہے ۔

راولپنڈی اسلام آباد یونین آف جرنلسٹس نے آئی جی خیبر پختون خواہ سے مطالبہ کیا ہے کہ ملک شہزاد کو دھمکیاں دینے والوں کیخلاف کارروائی کی جائے ۔

Comments: 1

Your email address will not be published. Required fields are marked with *