اہلسنت کی حکومت اور تحریک لبیک سے مذاکرات کے ذریعے معاملات حل کرنے کی اپیل

اسلام آباد : اہلسنت کے 15 رکنی وفد کی حکومت اور تحریک لبیک سے مذاکرات کے ذریعے معاملات حل کرنے کی اپیل کی ہے ،اس 15 رکنی وفد کی قیادت صاحبزادہ حامد رضا سربراہ سنی اتحاد کونسل کررہے ہیں۔

صدر عارف علوی نے اہلسنت وفد کو اپنا کردار ادا کرنے کی یقین دہانی کروادی۔ انہوں نے علماء و مشائخ کے 15 رکنی وفد نے معاملات و افہام و تفہیم سے حل کروانے کے لئے اپنا کردار ادا کرنے اپیل کی۔ اہلسنت کے 15 رکنی وفد کا صدر اسلامی جمہوریہ پاکستان عارف حسین علوی و حکومتی ٹیم سے تین گھنٹے مذاکرات کا پہلا دور مکمل ہوگیا۔

مصالحتی کمیٹی تین راؤنڈز میں حکومت اور تحریک لبیک کی قیادت سے مذاکرات کرے گی۔ حکومت اہلسنت وفد کو دوسرے راؤنڈ میں تحریک لبیک کے مارچ اور امن و امان کی صورتحال پر بریفنگ دے گی۔ جس کا دورانیہ چار سے چھ گھنٹے کا ہوگا۔

مزید پڑھیں: سپریم کورٹ کا فیصلہ پاکستان ریلوے کی اراضی سے قبضہ مافیا کا خاتمہ

اہلسنت کے علماء کی کل وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات متوقع ہے۔ جب کہ مصالحتی کمیٹی میں شامل اراکین کی تحریک لبیک کی قیادت اور سعد رضوی سے بھی ملاقات بھی متوقع ہے۔

مصالحتی کمیٹی نے حکومت کو مذاکرات کے ذریعے معاملات حل کرنے اور تحریک لبیک کو مارچ روکنے کی اپیل کردی۔ علماء کے وفد نے مذاکرات کے جاری عمل تک حکومت سے مزید گرفتاریاں نہ کرنے اور تحریک لبیک کے قائدین کو پرامن رہنے کی اپیل کردی۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *