آدابِ محفل

تحریر: حکیم الامت مولانا اشرف علی تھانوی

جس سے ملو ادب سے ملو نرمی سے ملو، محفل میں تھوکو نہیں، وہاں ناک صاف مت کرو، اگر ایسی ضرورت آن پڑے تو وہاں سے چلے جاؤ، اگر جمائ یا چھینک آۓ تو منہ پر ہاتھ رکھو، آواز پست کرو، کسی کی طرف پشت مت کرو، کسی کی طرف پاؤں مت کرو، تھوڑی کے نیچے ہاتھ دیکر مت بیٹھو۔

انگلیاں مت چٹخاؤ، بلا ضرورت بار بار کسی کی طرف مت دیکھو، ادب سے بیٹھے رہو، بہت زیادہ مت بولو، بات بات پر قسم مت کھاؤ، جہاں تک ممکن ہو خود کلام مت شروع کرو، جب دوسرا شخص بات کرے تو خوب توجہ سے سنو تاکہ اسکا دل خراب نہ ہو البتہ اگر وہ گناہ کی بات کر رہا ہو تو مت سنو یا تو منع کردو یا وہاں سے اٹھ جاؤ۔

مزید پڑھیں: سات سماجی گناہ کبیرہ !

جب تک کوئ شخص بات مکمل نہ کرلے بیچ میں مت بولو، جب کوئ اۓ اور محفل میں جگہ نہ ہو تو ذرا اپنی جگہ سے کھسک جاؤ تاکہ جگہ بن جاۓ، جب کسی سے ملو یا رخصت ہونے لگو تو السلام علیکم کہو اور جواب میں وعلیکم السلام کہو۔

رب تعالی عمل کی توفیق عطا فرماۓ۔

نوٹ: ادارے کا تحریر سے متفق ہونا ضروری نہیں، یہ بلاگ مصنف کی اپنی رائے پر مبنی ہے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *