راولپنڈی: منظم نوسرباز گروہ شادی کا جھانسہ دے کر شہریوں کو لوٹنے لگے

راولپنڈی : منظم نوسرباز گروہ شہریوں کو ان کی جمع شدہ پونجی سے محروم کرنے لگا ،نوسرباز گروہ کا طریقہ واردات مختلف شہروں میں شادی آفس کھول لیے،شادی کا جھانسہ دے کر شہریوں کو لوٹنے لگے۔

ہری پور کے رہائشی محمد ارشد جو دوسری شادی کے لیے ،ہری پور کی رہائشی گل ناز بی بی کے ہتھے چڑھ گیا ،جس نے گھر میں شادی آفس بنا رکھا ہے
گل ناز بی بی نے محمد ارشد سے 30 ہزار روپے فیس لے کر راولپنڈی گرجا چوکی کی حدود گرجا روڈ ایک گھر میں رشتہ دکھانے کے لئے لے آئی۔

یہ پورا گروہ جسم فروشی کا کام کرتا ہےجس میں ایک نکاح خواں مولوی اس کے علاوہ چار سے پانچ مرد 10 سے 12 خواتین شامل ہیں
محمد ارشد کو جب اس گروہ کے سرغنہ نے پوری طرح اپنے جال میں پھانس لیا تو کچھ دن بعد كنول نامی لڑکی سےشادی کر دی گئی یہ گروہ مجبور اور ایسے لوگوں کو اپنے جال میں پھنستا ہے جو گھر سے چھپ کر شادی کرنا چاہتے ہو ۔

محمد ارشد حق مہر کی تین لاکھ روپے نقد رقم دے کر لڑکی کو لے کر اپنے گھر ہریپور آگیا چار دن بعد لڑکی نے بیماری کا بہانہ بنایا اور سسرال جانے کی ضد کرنے لگیں محمد ارشد نے اس کو تین تولہ زیور شاپنگ کی مد میں اسی ہزار روپے کی رقم دی اور اس کو لے کر گرجا روڈ راولپنڈی آگیا ۔

جب محمد ارشد اپنے سسرال پہنچا تو وہاں پہلے سے چار افراد موجود تھے جنہوں نے محمد ارشد کو کہا یہ تو میری بیوی ہے اس کا نکاح میرے ساتھ ہوا ہے تم یہاں سے بھاگ جاؤ ورنہ تمہیں ہم جان سے مار دیں گے کیونکہ محمد ارشد کو جعلی نکاح نامہ دیا گیا اس کے بعد محمد ارشد کو دھکے دے کر گھر سے باہر نکال دیا گیا محمد ارشد نے احتیاط ایک عدد درخواست گرجا چوکی اپنے مکمل روداد سنا کر دے دیحسب روایت پولیس کی سست روی کی وجہ سے پولیس نے اس پر عملدرآمد کرنا اپنی ڈیوٹی اور فرض نہ سمجھا ۔

جس وجہ سے محمد ارشد انصاف کے تقاضوں کے لیے ہری پور واپس آگیا اور وہاں پر ایک عدد درخواست دی،محمد ارشد سے نوسرباز گروہ میں بہت منظم طریقہ سے اس کی جمع شدہ پونجی مبلغ ساڑھے سات لاکھ روپے سے اس کو محروم کر دیا محمد ارشد اب انصاف کے لیے دربدر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہے جبکہ قانون نافذ کرنے والے ادارے کسی قسم کا تعاون نہیں کررہے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *