وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری کی زیر صدارت احترام انسانیت، بین المذاہب ہم آہنگی کانفرنس

پشاور: وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری کی زیر صدارت احترام انسانیت اور بین المذاہب ہم آہنگی کانفرنس منعقد ہوئی ،کانفرنس میں سنیٹرز، وفاقی و صوبائی ارکان اسمبلی، ہندو، سکھ، مسیحی، بہائی، کیلاش اور مسلم برادری نے شرکت کی۔

اس موقع پر کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر مذہبی امورپیر نورالحق قادری نے کہا کہ میثاق مدینہ کے اکثر نکات مدینہ کے آس پاس بسنے والے غیر مسلم آبادی سے متعلق تھے، دنیا کو آج اقلیتوں کے حقوق کی فکر ہے، اسلام نے 14 سو سال پہلے یہ بات واضح کر دی تھی،مذہب کی بنیاد پر دشمن ملک کو راہداری کی اجازت دینا پاکستان ہی کا کارنامہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت و ریاست کو ایسا نطام دینا چاہئے جہاں مذہب کی بنیاد پر کوئی ظلم نہ ہو،آسام کے مسلمانوں سے غیر انسانی سلوک سے بھارت کا اصل چہرہ بے نقاب ہو گیا،بھارت نے صرف نسل اور مذہب کی بنیاد پر لوگوں کو بے دخل کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ ہر مذہب کے مبلغ کا کام مذہب کی درست تعلیم دینا ہے،میں نے قومی اقلیتی کمیشن کا چیئرمین بننے سے انکار کیا، اور ایک ہندو چیلا رام کو چیئرمین بنایا گیا۔

کانفرنس سے سنیٹر گرومیت سنگھ، ایم پی اے وزیر زادہ، بشپ ہمفری سرفراز پیٹر، مولانا طیب قریشی، روی کمار، ایم این اے، ڈاکٹر سارہ صفدر، ممبر اقلیتی کمیشن، ڈاکٹر حافظ عبد الغفور، ہارون سروپ دیال، ولسن وزیر ایم پی اے، اور قاری روح اللہ مدنی نے خطاب کیا۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *