سندھ ہائی کورٹ نے گلبرگ ٹاؤن کے ڈائریکٹر کو طلب کرلیا ،

الرٹ نیوز : سندھ ہائیکورٹ نے گلبرگ ٹاؤن کے ڈائریکٹر کو طلب کرلیا ،

کرن ریزیڈنسی میں غیرقانونی اور خلاف ضابطہ تعمیر شدہ Mezzanine فلور فوری منہدم کرنے کا حکم دیا تھا لیکن سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے ڈائریکٹر گلبرگ ٹاؤن نے کارروائی نہ کرکے عدالتی حکم کی خلاف ورزی کی تھی .سندھ ہائی کورٹ نے ”کرن ریزیڈنسی” میں غیرقانونی تعمیرات کے خلاف سندھ بلڈنگ کنڑول اتھارٹی کو فوری انہدامی کارروائی کا حکم پر عملدرآمد نہ کرنے والے ڈائریکٹر گلبرگ ٹاؤن سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کو عدالت طلب کرلیا .

یونائیٹڈ ہیومن رائٹس کمیشن پاکستان کی جانب سے سندھ ہائی کورٹ میں آئینی درخواست دائر کی گئی تھی جس میں سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی جانب سے جمع کروائے گئے جواب میں اعتراف کیا گیا تھا کہ گلبرگ ٹاﺅن میں قائم کرن ریزیڈنسی کے بلڈر المیزان انٹرپرائزز اینڈ بلڈر و ڈیولپرز کی جانب سے سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی سے این او سی سیل و ایڈورٹائزنگ لیا گیا تھا.

جس کے مطابق انہیں (Basment + Ground + 1 to 9th Floors) کی تعمیرات کی اجازت دی گئی تھی، جبکہ بلڈر نے کراچی بلڈنگ اینڈ ٹاﺅن پلاننگ ریگولیشن 2002 اورسندھ بلڈنگ کنٹرول آرڈیننس 1979 کی سنگین خلاف ورزی کرتے ہوئے غیرقانونی (Mezzanine) فلور تعمیر کیا، جبکہ اضافی جگہ پر بھی غیرقانونی تعمیرات کی گئیں اور لازمی کھلی جگہ پرغیرقانونی تعمیرات کیں ۔

اس رپورٹ کی روشنی میں معزز جج سندھ ہائی کورٹ نے سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کو فوری کارروائی کرکے غیرقانونی تعمیرات کو منہدم کرنے کا حکم دیا تھا لیکن ڈائریکٹر گلبرگ ٹاؤن سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی جانب سے کوئی کارروائی نہیں کی گئی اس رپورٹ کے بعد عدالت نے سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ڈائریکٹر گلبرگ ٹاؤن کو انگلی تاریخ کو طلب کرلیا ہے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *