جرنلسٹ پروفیشنل اینڈ پروٹیکشن بل قائمہ کمیٹی میں رکا ہوا ہے، نقصان صحافیوں کو ہورہا ہے، فرخ حبیب

اسلام آباد : وزیر مملکت اطلاعات و نشریات فرخ حبیب نے کہا ہے کہ اگر آپ صحافیوں کے اتنے ہی خیر خواہ ہیں تو بلاول صاحب بتائیں بطور چیئرمین قائمہ کمیٹی انسانی حقوق پروٹیکشن آف جرنلسٹس اینڈ میڈیاپروفیشنلز بل کو التواء میں کیوں رکھا ہوا ہے ،جرنلسٹ پروفیشنل اینڈ پروٹیکشن بل قائمہ کمیٹی میں رکا ہوا ہے اس کا نقصان صحافیوں اور میڈیا ورکرز کو ہورہا ہے ، یہ قانون بن جائے تو صحافیوں کو 100فیصد تحفظ ملے گا ،پی ایم ڈی اے کے ذریعے صحافیوں ،میڈیا ورکرز کی تنخواہوں کی بروقت ادائیگی اور نوکریوں کے تحفظ کو یقینی بنایا گیا ہے، اپوزیشن تنقید برائے تنقید پالیسی کے تحت پی ایم ڈی اے کی مخالفت کر رہی ہے ،پی ایم ڈی اے میں صحافیوں اور میڈیا ورکرزکی تربیت کو لازمی قرار دیا گیا ہے،

معاشی استحصال پر 21دنوں میں فیصلہ حاصل کرسکیں گے ،الیکٹرانک میڈیا کے صحافیوں اور میڈیا ورکرز کو اپنے حقوق کے لئے موثر پلیٹ فارم میسر آئے گا ،بلاول زرداری نے پاکستان میڈیا ڈویلپمنٹ اتھارٹی (پی ایم ڈی اے ) کو پڑھے بغیر ہی مسترد کر کے سیاسی نابلد ہونے کا ثبوت دیا ہے۔منگل کو کا بلاول زرداری کے بیان پر ردعمل میں وزیر مملکت اطلاعات و نشریات فرخ حبیب نے کہا کہ بلاول بتائیں کہ سندھ میں اجے لالوانی اور عزیز میمن سمیت صحافیوں پر حملوں اور صحافیوں کے قتل کے واقعات پر آج تک کیا کارروائی کی ،پراسرار خاموشی پر صحافتی برادری اور متاثرہ صحافی خاندانوں سے معافی مانگیں گے۔

انہوں نے کہا کہ سندھ میں گرانفروشوں اور ذخیرہ اندوزوں کی حکومت ہے ،اسی وجہ سے سب سے ذیادہ مہنگائی سندھ میں ہے ،حقیقت یہ ہے کہ پیپلز پارٹی گرانفرشوں اور ذخیرہ اندوزوں کی پشت پناہی کر رہی ہے ،بلاول صاحب ،بتائیں کہ کب تک سندھ کے عوام کو ان گرانفرشوں کے رحم و کرم سے چھوڑے رکھیں گے ۔

انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی مسلسل تیسری مرتبہ سندھ پر حکومت کر رہی ہے لیکن سندھ کے عوام کے مسائل جوں کے توں ہیں ،آج تک کراچی سمیت سندھ کے عوام کو پینے کا صاف پانی فراہم نہ کرنے والے کس منہ سے وفاقی حکومت پر تنقید کرتے ہیں ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *