امیر جےیوآئی ف مولانا فضل الرحمان کی دارالعلوم کراچی آمد،مفتی اعظم سے ملاقات

کراچی : جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی دارالعلوم کراچی کورنگی آمد،شیخ الاسلام مولانا مفتی عثمانی کی جانب سے مولانا فضل الرحمن کے اعزاز میں ظہرانہ دیا گیا ۔

مولانا فضل الرحمان نے مفتی تقی عثمانی سے وقف املاک و گھریلو تشدد بلز کے حوالے سے مشاورت کرتے ہوئے کہا کہ وطن عزیز کو سیکولر اسٹیٹ بنانے کی مذموم کوششیں کی جارہی ہیں ،وطن عزیز کے اسلامی شناخت کو ہر حال میں برقرار رکھا جائے گا۔موجودہ حکومت مغربی ایما پر اس ایجنڈے کی تکمیل کرنا چاہتی ہے انہوں نےکہا کہ یہ بل دین ، اسلام ، آئین پاکستان اور مشرقی اقدار کے منافی ہیں ۔

مفتی اعظم پاکستان مفتی تقی عثمانی نے کہا کہ ملک کی اسلامی شناخت کی بقاء کیلئے مولانا آگے بڑھیں،مذہبی حلقوں میں پھیلنے والی بےچینی کا خاتمہ کرنا ہوگا ۔ دونوں رہنماؤں نے اس حوالے سے مشترکہ جدوجہد پر باہمی اتفاق رائے ظاہر کیا۔

اس موقع پر راشد سومرو، اسلم غوری، عبدالکریم عابد، قاری عثمان، مولاناغیاث، سمیع سواتی ودیگر شامل تھے۔

علاوہ ازیں جمعیت علماء اسلام کے مرکزی امیر و سربراہ پی ڈی ایم مولانا فضل الرحمان اور مہاجر قومی موؤمنٹ کے چیئرمین آفاق احمد کی ملاقات ہوئی،آفاق احمد مولانا کی رھائش گاہ پہنچے۔

ملاقات میں کراچی کے مسائل ،بلدیاتی انتخابات،اور آئندہ کی حکمت عملی اورسندھ میں مشترکہ جدوجہد پر تفصیلی مشاورت کی گئی ہے۔

دونوں رہنماؤں کا کہنا تھا کہ کراچی کی گلیوں بھتے ہوئے سیورج کے پانی اور جگہ جگہ کچرے کے ڈھیر سے حکومت سنجیدگی عیاں ہے۔

انہوں نے کراچی سمیت سندھ کے دیگر شہری اضلاع تک تعاون بڑھانے کے لیے رابطے جاری رکھنے پراتفاق کیا۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *