ملتان، 4 ٹک ٹاکرز ایک مہینےکی نظربندی پر سینٹرل جیل منتقل

ملتان: () بڑے بال ، مونچھوں پر تاؤ اور فلموں کے ڈائیلاگ پر ٹک ٹاک بنانا ٹک ٹاکرز کو مہنگا پڑ گیا۔ ڈپٹی کمشنر ملتان نے 3 بھائیوں سمیت 4 ٹک ٹاکرز کو ایک مہینے کی نظر بندی پر سینٹرل جیل بھیج دیا سینٹرل جیل میں بند ٹک ٹاکرز کے اہل خانہ نے غیر قانونی نظر بندی کو ختم کرنے کے لئے ہائیکورٹ ملتان بنچ سے رجوع کر لیا سی پی او ملتان کی درخواست پر ڈپٹی کمشنر نے 3 ایم پی او کے تحت ٹک ٹاکرز کی نظر بندی کے احکامات جاری کئے تھے۔

ٹک ٹاکرز پر سنسنی خیز ویڈیوز سوشل میڈیا پر اپلوڈ کر کے دہشت اور خوف پھیلانے کا الزام ہے، ہائیکورٹ نے نظر بندی کے خلاف حکومت پنجاب سے بذریعہ ہوم سیکرٹری ، کمشنر ، ڈپٹی کمشنر ، آر پی او اور سی پی او سے 2 اگست کو جواب طلب کر لیا۔

مزید پڑھیں: بچوں پر نظر رکھنا کیوں ضروری ہے

درخواست گزار نے کہا کہ ٹک ٹاکرز غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث نہیں نہ ریکارڈ یافتہ ہیں، ٹک ٹاکرز نے امن و امان کو خراب نہیں کیا نا ہی ویڈیوز کے زریعے لوگوں کو مشتعل کیا ہے، ٹک ٹاکرز تینوں بھائی پٹرول پمپ پر سیکیورٹی گارڈ ہیں . نظر بندی کے احکامات غیر قانونی ہیں ، جنہیں کالعدم قرار دیا جائے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *