ہلالِ احمر کی ریسپانس ٹیمیں اور رضاکار الرٹ کردئیے گئے

ابرار الحق

اسلام آباد( ) ہلالِ احمر نے حالیہ مون سون بارشوں کے دوران نیشنل ہیڈکوارٹرز، صوبائی اور ضلعی برانچوں، ایمرجنسی و ڈیزاسٹر ریسپانس ٹیموں، فرسٹ ایڈر، رضاکاروں، ہلالِ احمر ہسپتالوں اور ایمبولینس سروس کو الرٹ کردیا ہے۔

چیئرمین ہلالِ احمر پاکستان جناب ابرار الحق نے گزشتہ روز ہلالِ احمر کے تمام شعبہ جات کو متحرک کردیا ہے تاکہ ممکنہ بارش سے ہونے والے نقصان سے بچا جاسکے۔ نیشنل ہیڈکوارٹرز میں منعقدہ اجلاس میں جناب ابرار الحق نے اقدامات کا جائزہ لیا۔

مزید پڑھیں: ہلالِ احمر کا فلسطینیوں کیلئے امداد کا اعلان

انہوں نے محکمہ موسمیات کی جانب سے جاری پیشگوئی کے بعد تمام علاقوں بشمول اسلام آباد میں ایمرجنسی ریسپانس ٹیموں کو ہائی الرٹ رہنے کی ہدایت کی ہے۔ انہوں نے ڈیزاسٹر مینجمنٹ، ایمرجنسی ریسپانس اور ایمبولینس ڈیپارٹمنٹ کے افسران کو ہدایت کی کہ کسی بھی ممکنہ ناگہانی صورتحال میں شہریوں کوسہولت فراہم کرنے کیلئے ہمہ وقت تیار رہیں۔

انہوں نے ہلالِ احمر کے تمام ہسپتالوں میں ڈاکٹروں، پیرامیڈیکس کی 24 گھنٹے موجودگی کو یقینی بنانے اور بارش کے باعث پیدا سنگین صورتحال سے نمٹنے کیلئے انتظامات کی ہدایت کی ہے۔

مزید پڑھیں: اسلام آباد بارشیں، سعید غنی کا عمران خان پر طنزیہ وار

مزید براں ہلالِ احمر کنٹرول روم مستعدی کے ساتھ صورتحال کو مانیٹر کررہا ہے اور ضرورت کے وقت رضاکاروں اور ایمبولینس سروس کو فوری مہیا کیا جائے گا۔ جناب چیئرمین ابرار الحق نے کہا ہے کہ شہری بلا ضرورت باہر نہ نکلیں اور غیر ضروری سفر سے بھی گریز کریں۔ شہری بجلی کے کھمبوں، درختوں اور ہورڈنگز کے نیچے کھڑے ہونے سے بھی اجتناب برتیں۔

انہوں نے کہا کہ مون سون کے موسم میں ملک بھر میں کسی بھی ناگہانی صورتحال سے نمٹنے کیلئے ہلالِ احمر، حکومت، پاک آرمی، این ڈی ایم اے، پی ڈی ایم ایز، بحالی و ریلیف کے محکمہ جات کے ساتھ ریسپانس کیلئے مکمل تیار ہے۔ انہوں نے اِس اَمر کو دھرایا کہ ہلالِ احمر کے رضاکار ہمیشہ خلوصِ نیت سے متاثرہ لوگوں کی مدد کرتے ہیں اور ضرورت کے وقت ریسپانس کیلئے ہمیشہ وقت تیار رہتے ہیں۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *