پاکستان کے پارلیمانی وفد کی آذربائیجان کے صدر سے صدارتی محل میں ملاقات

اسلام آباد: اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا ہے کہ آذربائیجان اور پاکستان مشترکہ مذہب،اخوت، تاریخ، ثقافت اور روایات کے مضبوط رشتوں میں بندھے ہوئے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ پارلیمانی سفارتکاری کے فروغ سے دونوں ممالک کے میں مابین دوطرفہ باہمی تعلقات میں اضافہ ہوگا۔ . ان خیالات کا اظہاراسپیکر قومی اسمبلی انہوں نے آذبائیجان کے صدر Ilham Aliyevسے باکو میں صدرتی محل میں ہونے والی اپنی ملاقات کے دوران گفتگوں کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر اسپیکر قومی اسمبلی کے ہمراہ اسپیکرز پہلے سہ فریقی اسپیکرز اجلاس میں شرکت کے لیے اذربائیجان کا دورہ کرنے والے پاکستان کے پارلیمانی وفد کے ممبران بھی موجود تھے ۔

اسپیکر اسد قیصر نے کہا کہ پاکستان اذربائیجان کے ساتھ توانائی، تجارت اور انفارمیشن ٹیکنالوجی اور دیگر اقتصادی شعبوں میں سرمایہ کاری کو فروغ دینے کا خواہاں ہے ۔انہوں نے مسئلہ کشمیر پر آذربائیجان کے غیر متزلزل حمایت آذربائیجان کے صدر کا شکریہ ادا کیا اور انہوں نے اُنہیں مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں سے آگاہ کیا۔ انہوں نے اذربائیجان کے صدر اور عوام کو آرمینیا کے ساتھ ہونے جنگ میں فتح پر مبارکباد دی۔ انہوں نے دوطرفہ تجارتی حجم میں اضافے کے لیے دونوں ممالک کی وزات تجارت میں جوائنٹ ورکنک گروپ کی تشکیل دینے کی تجویز دی ۔ انہوں نے ذربائیجان کے صدر کو پاکستان کا دورہ کرنے اور اور مجلس شوریٰ پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرنے کی دعوت بھی دی۔

جمہوریہ آذربائیجان کے صدر الہام علیئیف نے کہا کہ آذربائیجان مسئلہ کشمیر پر پاکستان کے اصولی موقف کی ساتھ کھڑا ہے اور تمام علاقاتی و عالمی فورمز پر پاکستان کے موقف کی حمایت جاری رکھے گا۔ صدر نے کہا کہ وہ کورونا وباء کی صورتحال کو بہتر ہوتے ہی پاکستان کا دورہ کریں گے۔ انہوں نے دونوں ممالک کے مابین تجارت، تعلیم، صحت، اور موسمیاتی تبدیلوں کے شعبوں میں دوطرفہ تعاوں میں اضافے کی اسپیکر قومی اسمبلی کی تجویز سے اتفاق کیا۔ انہوں نے دونوں ممالک کی ماحولیات کی وزارتوں میں تعاون کو فروغ دینے کی ضرورت پر زور دیا۔ قبل ازیں صدرتی محل آمد پر آذربائیجان کے صدر نے اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر اور اُن کے ہمراہ اذربائیجان کا دروہ کرنے والے پارلیمانی کے اراکین کا گرم جوشی کے ساتھ استقبال کیا۔

بعد ازاں اسپیکر قومی اسمبلی نے ترکی اور اذربائیجان کے ہم منصبوں اور پارلیمانی وفد کے ہمراہ تحریک آزادی اذربائیجان کے شہداء کی یادگار کا دورہ کیا جہا ں پر انہوں نے شہدا کے درجات کی بلندی کے لیے فاتحہ خوانی کی اور پھولوں کی چادر چڑھائی ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *