ذرا سوچیئے کیا یہ بھی؟

ذرا سوچیئے کیا یہ بھی؟

سِیف چیریٹی پر کام چل رہا ہے آجکل، مجھے کچھ آرٹیکل لکھنے تھے۔ بہت سارے فیکٹ اینڈ فیگرز جمع کیئے، اعداد و شمار کے ساتھ ساتھ کس کس طرح معالی معاونت ہوتی ہے

کالعدم اور شدت پسند تنظیموں کی، کتنے بیانک عزائم کے لئے انجانے میں بنا کسی تحقیق کے کی ہوئی ھماری مددکی رقم یا ہمارا دیا ہوا ٹائم یا کوئی بھی دوسرے وسائل استعمال کیا جاتا ہے۔ رونگھٹے کھڑے ہو جاتے ہیں انسان کے کہ اپنی تباہی کے اپنے ملک میں دہشت گردی کے ذمہ دار کوئی اور نہیں کسی نا کسی طرح ہم خود ہی ہیں۔۔۔

جہاں جہاں سِیف چیریٹی کا ذکر آیا اُن سورسسز کی بات ہوئی جنکے زریعے ایک کثیر رقم جمع کی جاتی ہے تو زیادہ تر یہی کہا گیا کہ زکوٰۃ، صدقات، خیرات، قربانی، صدقہ فطر، عشر، چندہ، عطیات، دیگر مذہبی تہوار، گھریلو رسومات ، آن لائن، موبائل فون پر پیغامات کے زریعے جمع کرنے والی رقم کے ہی بارے میں بات ہوئی۔۔۔

ایک چیز نے مجھے بہت کلک کیا، اپنا سارا بچپن سامنے آ گیا، آپکو بھی یاد ہوگا کہ سکولوں میں لاٹری کے ٹکٹ لے کے آیا کرتے تھے لوگ، کئی کئی انعمات ہوتے تھے درج اُن پر، گلی محلوں میں بھی اکثر و بیشتر ایسے کچھ لوگ گھومتے رہتے تھے اور کہتے تھے کہ جن کے انعمات نکل آئے وہ خوش نصیب ہونگے

جن کے نہیں نکلیں گے انعام وہ یہ سمجھیں کہ کسی غریب بے سہارا یتم مسکین کی مدد کر دی۔ اکثر میلوں میں ، فیسٹیولز میں بھی خاص طور پر ایک سٹال ہوتا تھا بھی اور ہے بھی جس میں لاٹری ٹکٹ پر بہر سے انعمات نکلتے ہیں۔ کچھ لاٹریز بیچنے والے تو ڈراء سے کچھ دن قبل ہی غائب ہو جاتے ہیں اور جو میلوں ، فیسٹیولز وغیرہ میں  قرہ اندازی بھی ہوتی ہے،وہاں انعمات بھی نکلتے ہیں لیکن آج تک میں حاضرین میں سے شازونادر ہی کسی کا انعمام نکلتے دیکھا یا سنا۔۔۔۔

کڑوروں نہیں تو لاکھوں میں ان لاٹری ٹکٹس کی فروخت ہوتی ہیں، کوئی ہزاروں میں اُن کے لئے انعمات لئے جاتے ہونگے وہ بھی صرف کاغذوں میں کیونکہ کسی عام آدمی کا  انعام نکلتے نہیں سنا میں نے اور نہ ہی دیکھا۔۔۔۔

اکثراوقات ٹی پر بھی اشتہار چل رہے ہوتے ہیں کہ فلاں چیز یا کارڈ خریدیں اور موٹر سائیکل جیتیں، گاڑی جیتیں ، دبئی کا ٹکٹ، عمرہ کا ٹکٹ، موبائل کا بیلنس اور خدا جانے کیا کیا، کہا جاتا ہے کہ ہر ہفتہ قرہ اندازی ہوگی، نمبر سکریچ  کرتے جائیں اور ہمیں بھجواتے جائیں،

جتنی زیادہ انٹریز اتنے ہی جیتنے کے مواقع۔۔۔۔اور سالوں سال وہی ایک ہی بندے کی ویڈیو انعمام جیتنے کی، یا تصویر یا اور کوئی ایسا ہی نا مانا جانے والا ثبوت پیش کیا جاتا رہتاہے اس کے باوجود بھی ہماری 80٪ عوام جو لوئرمڈل کلاس سے تعلق رکھتی ہے، دھڑادڑ وہ چیز خریدتے رہتے ہیں۔۔۔

کیا ہم نے کبھی سوچا کہ کیا کِیا جاتا ہے اس پیسے سے، یہ سارا سرمایہ کہاں استعمال ہوتا پے، کبھی ہم نے تحقیق کرنے کی معلومات لینے کی کوشش کی کہ یہ سب کیا اور کیوں اور کس کے لئے ہو رہا ہے؟؟؟؟؟

کیا یہ بھی شدت پسندوں کی معالی معاونت تو نہیں؟؟؟؟

ذرا سوچیئے کیا یہ بھی؟؟

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *