جامعہ الازہر نے انتہاپسندوں کی ابتدا سے ہی چالوں کو سمجھ کر ان کو بے نقاب کیا، علامہ محمد اسلم رضا

علامہ محمد اسلم رضا الازہری نائب صدر ورلڈ آرگنائزیشن فار الازہر گریجویٹس پاکستانی برانچ نے "مسلم نوجوان اور شدت پسندی کے خطرات ” کے موضوع پر ورلڈ آرگنائزیشن فار الازہر گریجویٹس پاکستانی برانچ کے تحت ” انتہا پسندانہ نظریہ کے خلاف نوجوانوں کی حفاظت ” کے موضوع پر مبنی سیمنار سے خطاب کرتے ہوئے کہا انتہا پسند تنظیموں کے نزدیک انسانی جان، بچوں اور عورتوں کی کوئی اہمیت نہیں بلکہ وہ انہیں اپنے ناپاک مقاصد کے لیے اسلحہ کے طور پر استعمال کرتی ہیں اور اپنے ناجائز غیر اسلامی مقاصد حاصل کرتی ہیں.

ان کا کہنا تھا کہ اس وقت ضرورت اس امر کی ہے کہ ہم اپنی آنے والی نسل کو ان کے اھداف کے بارے میں اور ان کے نوجوانوں کو ورغلانے کے طریقوں کے بارے میں بتا کر ان کی حفاظت کی جائے کہ وہ کس طرح ان کے پروپیکنڈوں سے اپنے آپ کو بچا سکیں۔

الاظہر جامعہ
الاظہر جامعہ

علامہ محمد اسلم رضا نے کہا کہ یہ عالمی طور پر جامعہ الازہر الشریف نے ان انتہاپسند تنظیموں کے ابتدائی دنوں سے ہی ان کی پش پردہ چالوں کو سمجھ کر ان کو بے نقاب کیا اور اب پوری دنیا میں شیخ الازہر امام اکبر پروفیسر ڈاکٹر احمد محمد احمد طیب کی سربراہی میں یہ آگاہی مہم چل رہی ہے اور پاکستان میں ورلڈ آرگنائزیشن فار الازہر گریجویٹس پاکستانی برانچ کے تحت صاحبزادہ عزیر محمود الازہری صدر پاکستانی برانچ کی صدارت میں پورے پاکستان میں یہ مہم جاری ہے اور آج فیض مشتاق ایجوکیشن فاونڈیشن کے تعاون سے یہ سمینار منعقد ہوا تاکہ ہم اپنے نوجوانوں کو ان تنظیموں کے خبیث مقاصد کے بارے بتا کر ان کی حفاظت کر سکیں۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *