نارتھ کراچی کی صنعتوں کا پانی بند، ٹینکر مافیا کی چاندی، پیداواری سرگرمیاں شدید متاثر

فیصل معیز خان

کراچی : نارتھ کراچی ایسوسی ایشن آف ٹریڈ اینڈ انڈسٹری (نکاٹی کے صدر فیصل معیز خان نے صنعتوں کو پانی کی عدم فراہمی پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے گورنر سندھ عمران اسماعیل اور وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ سے درخواست کی ہے کہ وہ صنعتی ایریا میں پانی کے شدید بحران کا نوٹس لیتے ہوئے ایم ڈی واٹر بورڈ کو فوری طور پر صنعتی ڈیمانڈ کے مطابق پانی کی بلاتعطل فراہمی یقینی بنانے کی ہدایات جاری کریں تاکہ پیداواری سرگرمیاں بغیر کسی رکاوٹ جاری رکھی جاسکیں۔

ایک بیان میں فیصل معیز خان نے کہاکہ پیداواری سرگرمیاں جاری رکھنے کے لیے پانی انتہائی اہمیت کا حامل ہے بلکہ بنیادی خام مال میں شمار ہوتا ہے مگر ان دنوں نارتھ کراچی کی صنعتوں کو پانی کی شدید قلت کا سامنا ہے جبکہ ٹینکر مافیا کے پاس پانی وافر مقدارمیں موجود ہے اس کے برعکس واٹر بورڈ کی لائنوں سے پانی دستیاب نہیں جو سوالیہ نشان ہے لہٰذا ہماری وفاقی حکومت سے بھی درخواست ہے کہ وہ ٹینکر مافیا کے خاتمے اور واٹربورڈ کے پانی کی سپلائی کے نظام کو بہتر بنانے میں اپنا کردار ادا کرے کیونکہ واٹر بورڈ کی جانب سے فیکٹریوں کو طلب کے مطابق پانی نہ ملنے سے پیداواری سرگرمیاں تعطل کا شکار ہورہی ہیں جس سے برآمدی مال کی تیاری اورغیر ملکی آرڈرزکی بروقت ترسیل دونوں متاثر ہوسکتی ہیں۔

انہوں نے ایم ڈی واٹر بورڈ کے رویے پر بھی احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ صنعتوں کو ڈیمانڈ کے مطابق پانی کی عدم فراہمی پر جب ایم ڈی واٹر بورڈ سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے صنعتکار برادری کو کوئی مثبت جواب نہیں دیا بلکہ ان کا رویہ انتہائی قابل مذمت تھا لہٰذا گورنر سندھ عمران اسماعیل اور وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ سے ایم ڈی واٹر بورڈ کو پابند کریں کہ صنعتکار برادری کے ساتھ بہتر رویہ اختیار کیا جائے اور ترجیحی بنیادوں پر مسائل حل کرتے ہوئے ڈیمانڈ کے مطابق پانی کی فراہمی یقینی بنائی جائے بصورت دیگر پیداواری سرگرمیاں بری طرح متاثر ہوں گی جس کے ملکی مجموعی برآمدات پر منفی اثرات مرتب ہوں گے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *