خطبہ جمعہ مسجد نبوی شریف سے چند اقتباسات.

خطیب: فضيلة الشيخ صلاح البدير

قتادہ رحمہ اللہ فرماتے ہیں: “لوگوں پر عذاب الٰہی ہمیشہ اچانک ہی نازل ہوا کرتا ہے اور اللہ تعالی نے کبھی بھی کسی قوم پر عذاب نازل نہیں کیا مگر جب وہ مدہوشی، غرور اور نعمتوں میں مبتلا ہوتے ہیں۔ سو اللہ کے بارے میں کسی دھوکے میں نہ رہنا ، کیونکہ نافرمان لوگوں کے سوا کوئی بھی اللہ تعالی کے بارے میں دھوکے کا شکار نہیں ہوتا”۔

عقبہ بن عامر رضی اللہ عنہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم سے روایت کرتے ہیں کہ آپ نے فرمایا:” جب تم دیکھو کہ کسی کی معصیت و نافرمانی کے باوجود اللہ تعالی اسے دنیا کی ہر وہ چیز وافر دے رہا ہے جسے وہ پسند کر تا ہو ، تو جان لو کہ یہ گرفتار کرنے کے لیے محض اللہ تعالی کا اسے ڈھیل دینا ہے، پھر رسول اللہ نے یہ آیت پوری تلاوت کی ” .

‎ مزید پڑھیں: مسجد نبوی کی محرابیں

اور حسن رحمہ اللہ کہتے ہیں کہ :” اللہ کی قسم! لوگوں میں سے جسے بھی اللہ تعالی نے دنیا وافر عطا کی اور وہ اس سے بے خوف ہو کہ کہیں یہ اس کے لیے کوئی چال و فریب تو نہیں، تو اس کا عمل تھوڑا اور عقل بیکار ہو جاتی ہے”۔

اور وہ دن بھی یاد رکھو کہ : (جب ہر شخص اپنے بہن بھائیوں ، ماں باپ اور بیوی بچوں کو بے یار و مددگار چھوڑ کر بھاگ جائے گا اور جس دن ہر ایک کو صرف اپنی ہی فکر پڑی ہوگی). وہ مصروفیت و پریشانی بھی کتنی بھیانک ہو گی کہ جب کوئی بھی اپنے رشتہ داروں اور یار دوستوں سے آنکھ تک
ملانے کو تیار نہیں ہو گا۔

‎ مزید پڑھیں: نماز تراویح کیلے “مسجد نبوی پریذی ڈینسی ایجنسی” کا پلان منظور

بلکہ انتہائی خوف و ہراس اور حالات کے یکسر بدل جانے سے ہر کوئی معذرت و فرار کے چکر میں ہو گا۔ اور شیاطین کے زہریلے حملوں سے اللہ سے پناہ مانگو اور اسی پر بھروسہ کرو، کیونکہ اللہ تعالی کی پناہ اور سہارا ہی حقیقی ہدایت اور گمراہی سے دوری کا مضبوط ہتھیار ہے۔

اسی پر اکتفا کرتے ہوئے اللہ سے بخشش طلب کرتا ہوں ، آپ بھی اسی سے بخشش طلب کرو، کیونکہ بخشش مانگنے والوں کی کامیابی کے بھی کیا کہنے ہیں۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *