ایف پی سی سی آئی کا ہیومن ریسورس سے متعلق ایک اعلی سطحی سیمینار کا انعقاد

کرا چی : میاں ناصر حیات مگو ں صدر ایف پی سی سی آئی نے اس بات پر زور دیا ہے کہ پاکستان کی ہیومن ریسورس کی ضروریات بین الاقوامی طریقوں سے مختلف ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہی وجہ ہے کہ ایف پی سی سی آئی نے ایس ایم ایز اور کاروباری افراد کی تعلیم کے لئے پاکستان کے حوالے سے ہیومن ریسورس مینجمنٹ میں جدید طرز عمل سے متعلق ایک تربیت اور سیمینار کا انعقاد کیا ہے۔ڈاکٹر ثوبیہ اقبال، ڈائریکٹر کیریئر سروسز اینڈ کارپوریٹ ریلیشنس، ڈی ایچ اے صفہ یونیورسٹی نے سیمینار کا انعقاد کیا اور ہیومن ریسورس مینجمنٹ کے ماضی، حال اور مستقبل کے بارے میں تبادلہ خیال کیا۔

انہوں نے پاکستانی کمپنیوں سے متعلق کیس اسٹڈیز اور ان کے ہیومن ریسورس کے امور بھی شیئر کیے۔سیشن کے اہم موضوعات میں کام کی جگہ پر ہراسانی، پیداوری صلاحیت کو بڑھانا، گھر سے کام کرنا اور انسانی وسائل کے انتظام کا مستقبل تھا۔ سیمینار میں ہیومن ریسورس کے پیشہ ور افراد، ماہرین تعلیم اور زوم کے ذریعے مختلف ممالک کے کاروباری افراد نے بھی شرکت کی اور پریزنٹیشن کے بعد اجلاس کو سوالات کے لئے کھلا رکھا گیا۔

یہ اعادہ کرنا مناسب ہے کہ ایف پی سی سی آئی اور ڈی ایچ اے صفہ یونیورسٹی نے مشترکہ طور پر ان تمام لوگوں کے لئے جدید، معلوماتی، اور اعلی سطحی ویبینارز اور تربیتی سیشنوں کا ایک پروگرام تیار کیا ہے جو جدید ترین اور بین الاقوامی کاروبار سیکھنا چاہتے ہیں، مارکیٹنگ، مینجمنٹ، کاروباری صلاحیت، سپلائی چین مینجمنٹ، ہیومن ریسورس مینجمنٹ، اور ای کامرس ٹیکنیکس جو وہ واقعی اپنے کاروبار کو تیزی سے قائم کرنے یا بڑھانے کے لئے لاگو کرسکتے ہیں۔

ایف پی سی سی آئی کا مقصد چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباری اداروں (ایس ایم ایز) کو نالج اکسیلینس کے ذریعے کامیاب بنانا ہے۔ جن کے پاس مواقع اور وسائل نہیں ہیں کہ وہ اپنے اور اپنے ملازمین کے لئے اس قسم کی اعلیٰ تربیت کا انتظام کریں۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *