مالی سال کے بجٹ 2022-2021 میں تعمیراتی انڈسٹری کو کوئی ریلیف نہیں دیا گیا، صدر حماد پونا والا

کراچی: حکومت کی جانب سے مالی سال کے بجٹ 2022-2021 میں تعمیراتی انڈسٹری کو کوئی ریلیف نہیں دیا گیا۔ جبکہ وزیراعظم عمران خان صاحب کا وژن ہے کہ تعمیراتی انڈسٹری کو فروغ دینا ہے۔ ان خیالات کا اظہار آل آئرن اسٹیل مرچنٹس ایسوسی ایشن کے صدر حماد پونا والا نےاپنے ایک بیان میں کیا۔

ان کا کہنا ہے کہ مالی سال کے بجٹ 2022-2021 میں سریا کی قیمتوں میں کوئی کمی نہیں کی گئی۔ سریا پر اس وقت آر ڈی 25 سے 30 فیصد ہے۔ جس کے باعث سریا مہنگا ہورہا ہے۔ سریا اس وقت 1 لاکھ 55 ہزار سے 1 لاکھ 57 ہزار روپے فی ٹن مارکیٹ میں فروخت کیاجارہا ہے ۔جس سے تعمیراتی انڈسٹری کو بہت زیادہ نقصان ہورہا ہے۔

مزید پڑھیں: افغانستان ایشو پر ہمارا کردار کیا ہونا چاہیے؟

لہذا آل آئرن اسٹیل مرچنٹس ایسوسی ایشن رجسٹرڈ کی حکومت سے پرزور اپیل ہے کہ اس پر نظرِ ثانی کی جائے اور سریا پر آر ڈی کو ختم کیا جائے۔
آر ڈی ختم ہونے سے سریا کی قیمتوں میں خاطر خواہ کمی ہوگی اور تعمیراتی انڈسٹری کو استفادہ حاصل ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ تعمیراتی انڈسٹری کو جب استفادہ حاصل ہوگا تو سستے مکانات بنیں گے جوکہ وزیراعظم عمران خان صاحب کا وژن بھی ہے۔
جبکہ اس اقدام سے سریا کی قیمتوں میں کمی واقع ہوگی اور حکومت کو بہترین ریوینیو حاصل ہوگا۔ لہذا ہماری اپیل ہے کہ اس پر فوری نظر ثانی کرکے سریا پر آر ڈی کو ختم کیا جائے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *