پشاور: خواجہ سراؤں کے حقوق اجاگر کرنے کی تنظیم کی سی ٹی او سے ملاقات

پشاور : خواجہ سراؤں کے حقوق اجاگر کرنے کی تنظیم آواز کے عہدیداروں کے وفد نے چیف ٹریفک آفیسر عباس مجید خان مروت سے پبلک ٹرانسپورٹ میں پیش آنیوالی مشکلات کے حوالے سے ملاقات کی۔ اس موقع پر غیر سرکاری تنظیم آواز کی ڈسٹرکٹ مینیجر جنت محمود‘ کوآرڈی نیٹر نظار خان‘ امانت علی‘ اسد علی‘ ایکٹیویسٹ ماہی گل اور موجود تھے۔

وفد نے چیف ٹریفک آفیسر عباس مجید خان مروت کو درپیش مسائل بارے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ پبلک ٹرانسپورٹ میں خواجہ سراؤں کے بیٹھنے کیلئے جگہ نہیں ہوتی ہے جس سے انہیں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے انہوں نے مزید کہا کہ ٹیکسی اور رکشوں میں ڈرائیورز ان سے دیگر شہریوں سے زیادہ کرایہ وصول کرتے ہیں اسی طرح ٹیکسیوں میں سفر کرتے ہو ئے ڈرائیور حضرات ان گاڑیوں میں دیگر لوگوں کو بھی بٹھاتے ہیں جن سے انہیں مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے اسی طرح خواجہ سراؤں کو ڈرائیونگ لائسنس کے اجراء میں بھی مشکلات درپیش ہیں۔

چیف ٹریفک آفیسر عباس مجید خان مروت نے وفد کو یقین دہانی کرائی کہ انہیں ٹرانسپورٹ کے سلسلے میں درپیش مشکلات کو ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے گا اور اس سلسلے میں باقاعدہ ٹریفک حکام ٹرانسپورٹ اڈوں میں جا کر ٹرانسپورٹروں کو آگاہی دی جائیگی تاکہ خواجہ سراؤں کو ان کے مکمل حقوق مل سکے۔

انہوں نے کہا کہ خواجہ سراؤں کو ڈرائیونگ لائسنس کا اجراء بھی ٹریفک قوانین کے مطابق کیا جائے گا جبکہ خواجہ سراؤں سے اچھا برتاؤ نہ کرنے والے ٹرانسپورٹروں کے خلاف قانون کے مطابق سخت کارروائی عمل میں لائی جائیگی۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *