آل پارٹیز ایکشن کمیٹی شیرشاہ کے وفد کی مولانا عظیم اللہ عثمان کی سربراہی میں واٹربورڈ کے افسران سے ملاقات

آل پارٹیز ایکشن کمیٹی

کراچی : شیرشاہ کالونی میں پانی کے شدید بحران پر آل پارٹیز ایکشن کمیٹی شیرشاہ کے وفد کی ایم ڈی واٹر بورڈ کے دفتر میں واٹر بورڈ کراچی بلک کے چیف انجینئر ظفر احمد پلیجو، ڈسٹریبیوشن کے چیف انجینئر سکندر علی زرداری، AC کیماڑی تنویر شیخ سے مولانا عظیم اللہ عثمان کی قیاد ت میں اہم ملاقات۔وفد میں جمعیت علماء اسلام،پاکستان پیپلز پارٹی،مسلم لیگ ن،جماعت اسلامی،عوامی نیشنل پارٹی کے رہنماؤں سمیت سماجی تنظیموں کے ذمہ داران بھی شامل تھے۔

آل پارٹیز ایکشن کمیٹی شیرشاہ کے رہنماؤں نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ علاقہ شیرشاہ میں پانی کا بحران شدت اختیار کرچکا ہے۔ علاقہ مکین پانی کی بوند بوند کو ترس گئے ہیں۔ شیرشاہ کی اکثریتی آبادی کئی سالوں سے پینے کے پانی سے بھی محروم ہے۔ جن آبادیوں کو پانی مل رہا تھا ان کا پانی بھی ڈیڑھ ماہ سے بند ہے۔

ان رہنماؤں نے کہا کہ تنگ آمد بجنگ آمد کے مصداق ہم روڈوں پر نکل کر اپنے حق کے حصول کیلئے بھرپور احتجاجی تحریک چلائیں گے۔ کیا وجہ ہیکہ ملک اور شہر کو سب سے زیادہ ریوینیو دینے والی آبادی کے مکین پانی جیسی بنیادی ضرورت سے بھی محروم کردئے گئے ہیں۔ واٹر بورڈ اپنا قبلہ درست کرے وگرنہ عوام کا رخ ایم ڈی واٹر بورڈ کے دفتر کی طرف ہوگا اور پانی نہ ملنے تک ایک قدم پیچھے نہیں ہٹیں گے۔واٹر بورڈ کے عملے نے شیرشاہ کالونی بالخصوص محمدی روڈ اور اکبر روڈ کی پانی سے متاثرہ آبادیوں تک پانی پہنچانے کے لئے حتمی حکمت عملی تیار کرنے کیلئے 15 روز کی مہلت طلب کرلی۔

واٹر بورڈ کے افسران نے آل پارٹیز ایکشن کمیٹی شیرشاہ کے وفد سے گزارش کی کہ اس دوران ہماری پوری کوشش ہوگی کہ شیرشاہ کو مکمل پانی فراہم کیا جاسکے اور جہاں کمی بیشی ہو اسے دور کرنے کیلئے اقدامات کئے جاسکیں اور شیرشاہ کالونی کو پانی کی سپلائی بہتر بنانے کیلئے مزید بہتر انداز سے کام کو آگے بڑھایا جاسکے۔

انہوں نے کہا کہ پانی نہ ملنے کی وجوہات میں سے اہم وجہ غیرقانونی کنکشنز کی بھرمار ہے۔ واٹربورڈ کی پوری کوشش ہوگی کہ ایسے کمرشل اور غیر قانونی کنکشنز کے خلاف گرینڈآپریشن کیا جائے جن کی وجہ سے پوری آبادی پانی سے محروم ہے۔آل پارٹیز ایکشن کمیٹی شیرشاہ کے وفد نے خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ اس دوران اگر سپلائی بحال نہ ہوئی تو اپنا احتجاج ریکارڈ کرانے کا حق محفوظ رکھتے ہیں جس میں شیرشاہ چوک کو بلاک کرنا اور ایم ڈی واٹر بورڈ کے دفتر کا گھیراؤ شامل ہے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *