تحریکِ تحفظ مساجد ومدارس کا وقف املاک ایکٹ کے خلاف احتجاجی مارچ کا اعلان

تحریک تحافظ مساجد و مدارس

راولپنڈی : تحریکِ تحفظ مساجد ومدارس نے وقف املاک ایکٹ کے خلاف احتجاجی مارچ کا اعلان کر دیا،7جولائ بروز بدھ سہ پہر تین بجے جامعہ اسلامیہ صدر سے کمیٹی چوک تک احتجاج مارچ ہوگا،مارچ میں تمام مکاتب فکر کے دینی مدارس،نامور شخصیات اور علماء و مشائخ شرکت کریں گے،دیگر اضلاع سے قافلے بھی مارچ میں شامل ہوں گے،لیاقت باغ کانفرنس احتجاجی مارچ کے بعد ہوگی،کانفرنس کی نئی تاریخ کا اعلان جلد کیاجائے گا، تحریک کے قائدین نے وقف املاک ایکٹ کی واپسی تک جدوجہد جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ کیا۔

تفصیلات کے مطابق وقف املاک ایکٹ کے خلاف جاری تحریک کی آرگنائزنگ کمیٹیوں کا اجلاس جامعہ اسلامیہ صدر میں منعقد ہوا اجلاس کے بعد مولانا قاضی عبدالرشید ناظم وفاق المدارس پنجاب،مولانا ڈاکٹر عتیق الرحمن امیر جمعیت علماء اسلام پنجاب،مولانا نذیر احمد فاروقی سرپرست تحریکِ تحفظ مساجد ومدارس،صاحبزاڈہ مولانا مفتی اویس عزیز اور دیگر علماء کرام نے اکابر اور مرکزی قائدین کے ساتھ مشاورت کے بعد اعلان کیا کہ وقف املاک ایکٹ کے خلاف 7جولائ بروز بدھ سہ پر تین بجے جامعہ اسلامیہ صدر راولپنڈی سے کمیٹی چوک تک عظیم الشان احتجاجی مارچ ہوگا ۔

مارچ میں تمام مکاتب فکر سے وابستہ مساجد ومدارس کے ذمہ داران،علماء ومشائخ اور زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے حضرات شرکت کریں گے-احتجاجی مارچ میں راولپنڈی کے علاوہ دیگر شہروں اور اضلاع سے لوگ قافلوں کی صورت میں شرکت کریں گے-

اس موقع پر آرگنائزنگ کمیٹیوں کے ذمہ داران نے اپنے اپنے شعبے کی کارکردگی کا جائزہ بھی پیش کیا چاص طور پر مختلف شہروں کا دورہ کرنے والے علماء کرام نے اجلاس کو بتایا کہ ہر جگہ لوگوں میں خوب جوش وخروش پایا جاتا ہے اور ہر کوئ وقف ایکٹ کی واپسی تک ہر قسم کی جدوجہد کرنے کے لیے پرعزم ہے-

اجلاس کے دوران اکابر علماء کرام کی علالت پر فکر مندی کا اظہار کیا گیا اور مولانا ڈاکٹر عبدالرزاق اسکندر،مولانا مفتی محمد رفیع عثمانی،مولانا فضل الرحمان اور مولانا محمد حنیف جالندھری کی جلد صحت یابی کےلیے دعا بھی کی گئ۔

اس موقع پر یکم جولائی بروز جمعرات کو لیاقت باغ میں ہونے والی کانفرنس کو موخر کرنے کا اعلان بھی گیا- لیاقت باغ کانفرنس کی نئ تاریخ کا جلد اعلان ہر دیا جائے گا اجلاس میں مولانا عبدالغفار توحیدی،مولانا ڈاکٹر ضیاء الرحمن،مولانا محمد طیب فاروقی،مولانا قاضی ہارون الرشید،مولانا مفتی عبدالرحمن،مولانا عبدالظاہر فاروقی،مولاناارشاد احمد،مولانا سعید اعوان،مفتی محمد عمر،مولاناعبدالقدوس محمدی اور دیگر بھی شریک ہوئے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *