واٹر بورڈ کا کورنگی میں پانی سپلائی کا ناغہ 20 دن تل پہنچ گیا

کراچی : واٹر بورڈ کورنگی نے شہریوں کو پانی فراہم کرنے کی بجائے 20 دن کا ناغہ کرنے اور پانی بند رکھنے کا جبری نظام مسلط کر دیا ہے ۔

واٹر بورڈ کورنگی سندھ حکومت کے دباو کا شکار ہے یا سیاسی وفاداریوں کے تقاضے کے باعث مجبور ہے ، شہری پانی کی بوند بوند کو ترس گئے ہیں ۔ واٹر بورڈ کورنگی کے سپلائی اور بلک کے افسران اور عملہ نے پانی کے لئے لانڈھی کورنگی والوں کو ترسا دیا ہے ۔

مذید پڑھیں :مولانا فضل الرحمن کو بلوچستان حکومت اور سینیٹ میں لانے کی آفر ہوئی : راشد محمود سومرو

کراچی واٹر بورڈ کے افسران نے کورنگی میں جگہ جگہ پانی کی فروخت کے مراکز بنا دیئے ہیں ۔ فیوچر کالونی ہائیڈرنٹ سے شہریوں کے نام پر جاری ہونے والے واٹر ٹینکر قیوم آباد کورنگی کراسنگ ضیا کالونی ، شرافی گوٹھ پر حکومتی رٹ واٹر بورڈ کی دیانتداری اور عوامی خدمت کا منہ چڑا رہے ہیں ۔

ہائیڈرنٹ سے نکلنے والے پانی کے بڑے ٹینکرز سے پانی چھوٹے ٹینکرز میں منتقل کر کے فروخت کیا جا رہا ہے ۔ ضلعی انتظامیہ کورنگی واٹر بورڈ کورنگی کے افسران نے پانی کی غیر قانونی فروخت اور کاروبار پر آنکھیں بند کر لی ہیں ۔

عوام کو دیا جانے والا پانی ٹینکرز کے ذریعہ فروخت کرنے اور واٹر بورڈ کی خاموشی پر شہریوں نے اعلی حکام سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *