ڈی ایس پی بوٹ بیسن ٹریفک کا مبینہ طور پر صدر شاپ کیپر ویلفیئر ایسوسی ایشن منور حسین پر تشدد

منور حسین

کراچی : گزشتہ شب شیرین جناح کالونی کے دکاندارو اور شاپ کیپر ویلفیئر ایسوسی ایشن کے صدر منور حسین کے ساتھ بوٹ بیسن ٹریفک ڈی ایس پی زکیۂ ملک ایس ایچ او یونس اور پولیس کی نفری ان کے ہمراہ جس طرح ظلم و ستم وہ بربریت کا مظاہرہ کیا وہ اپنی مثال آپ ہے ان پر مبینہ طور پر بہیمانہ تشدد کیا گیا اور صدر منور حسین اور کچھ دکانداروں کے خلاف جھوٹی ایف آئی آر کاٹی گئی ڈی ایس پی اور پولیس نے فائرنگ کرکے علاقے میں خوف و ہراس پھیلایا۔

جھوٹی ایف آئی آر میں فائرنگ دکانداروں اور صدر منور حسین کو مورد الزام ٹھہرایا منور حسین سے ایک عدد موبائل اور تین لاکھ 75 ہزار روپے جن کی کوئی انٹری نہیں کی گئی اور نا ہی یہ ماننے کو تیار ہے اس ساری گیم کا ماسٹر مائنڈ ایس ایچ او ماڈل تھانہ کلفٹن پیر شبیر ہے جو کہ اس سے پہلے تین تلوار میں بارہ کلو سونے کے کیس میں دو کلو سونا چھپا یا جو کہ بعد میں ان سے واپس برآمد ہوا۔

ان سے اور مختلف واقعات میں کلفٹن بلاک ٹو میں بتھ کے کیس میں ان کی سہولت کاری کا کام بھی انجام دیا اور ملزم پر دفع 420 اور506 لگایاجوکے بیل ایبل آفنس ہیں ایڈیشنل آئی جی کراچی اور ایس ایس پی ساؤتھ عمران مرزا کی مداخلت پر کیس ری انویسٹیگیٹ کے لیے ایس آئی او ٹرانسفر کیا گیا۔

منور حسین نے اس موقع پر آئی جی سندھ سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ خدارہ اس مسئلے کی شفاف انکوائری کی جائے اور ڈی ایس پی ایس او ایس ایچ اوبوٹ بیسن کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *