سندھ، نالہ صفائی مہم جاری، 14 روز میں 2لاکھ کیوبک فٹ کچرا نالوں سے نکال لیا گیا

کراچی(اسٹاف رپورٹر) مون سون سے قبل برساتی نالوں کی صفائی کے حوالے سے بنائی گئی حکومت سندھ کی حکمت عملی کام کرتی نظر آرہی ہے۔

سیکرٹری بلدیات سندھ سید نجم احمد شاہ نے اس حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ مورخہ26مئی سے آغاز ہونے والی نالہ صفائی مہم کے تحت 8جون تک فراہم ہونے والے اعداد و شمار کے نتیجے میں محض چودہ دنوں کے اندر انیس لاکھ، اٹھانوے ہزار، چھہ سو پچیس کیوبک فٹ کچرا نالوں سے نکال لیا گیا جس کو دو ہزار سات سو تہتر ڈمپرز کے ذریعے لینڈ فل سائٹس منتقل کیا گیا ہے اور مزید کام پوری رفتار سے جاری ہے۔

نجم احمد شاہ کے مطابق گوند پاس لینڈ فل سائٹ پر برساتی فضلہ ڈیڑھ ہزار ڈمپرز اور جام چاکر و لینڈ فل سائٹ تک برساتی نالوں سے نکالا جانے والاکچرا بارہ سو تہتر ڈمپرز میں منتقل کیا گیا ہے۔

مزید پڑھیں: انجمن طلبہ اسلام کا تعلیمی بجٹ میں اضافے کیلئے ملک گیر’تعلیم بچاؤمہم‘‘چلانے کا اعلان

سیکرٹری بلدیات سندھ نے تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ ضلع غربی کے برساتی نالوں سے چار لاکھ انہتر ہزار دو سو اڑتالیس کیوبک فٹ فضلہ 576ڈمپرز میں منتقل کیا گیا، ڈسٹرکٹ ایسٹ سے ایک لاکھ اکتیس ہزار پانچ سو پندرہ کیوبک فٹ کچرا 191ڈمپرز کے ذریعے، بلدیہ وسطی سے 599450کیوبک فٹ برساتی فضلہ 778ڈمپرز کے ذریعے،بلدیہ ملیر سے ننانوے ہزار پانچ سو کیوبک فٹ فضلہ 160 ڈمپرز کے ذریعے، ڈسٹرکٹ کورنگی سے 124539کیوبک فٹ کچراایک سو چوالیس ڈمپرز کے ذریعے اور ڈسٹرکٹ ساوتھ سے 574295کیوبک فٹ ٖفضلہ 924ڈمپرز کے ذریعے لینڈ فل سائٹس منتقل کیا گیا ہے۔

سندھ حکومت کی اس شاندار کارکردگی کے حوالے سے انجینئر سید نجم احمد شاہ نے مسرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعلیٰ و وزیر بلدیات سندھ کی مستقل رہنمائی کی بدولت نالہ صفائی مہم تیزی کے ساتھ کامیابی کی منازل طے کررہی ہے اور برساتی نالوں کی صفائی کے لئے تشکیل دی گئی کمیٹی موثر انداز سے اپنی ذمہ داریاں سر انجام دے رہی ہے۔

مزید پڑھیں: برساتی نالوں کی صفائی کا عمل پوری رفتارسے جاری ہے، نجم احمد شاہ

سیکرٹری بلدیات سندھ نے امید ظاہر کی کہ جلد ہی برساتی نالوں کی مکمل صفائی کا عمل تکمیل کو پہنچ جائے گا اورلوگوں کے لئے سہولیات وآسانیوں کی فراہمی کا مشن مکمل ہوکررہے گا۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *