پشاور: مفتی کفایت اللّٰہ کی رہائی کیلئے جے یو آئی کا احتجاج، فوری رہائی کا بھی مطالبہ

مفتی کفایت اللہ کی رہائی کیلئے احتجاج

پشاور: جے یو آئی کے قید رہنماء مفتی کفایت اللہ کی رہائی کے لیے جےیوآئی نے پشاور پریس کلب پر احتجاج ریکارڈ کرایا۔

احتجاج کی قیادت جے یوآئی ضلع پشاور کے جنرل سیکرٹری خالد وقار چمکنی ضلعی رہنما پیر سجاد سبحان مفتی سیار احمد ڈاکٹر عظمت علی مہمند قاری قاسم رفیق نے کی جبکہ اس میں مفتی کفایت اللہ کے فرزند حافظ حسین کفایت نے خصوصی شرکت کی۔

حافظ حسین کفایت کا کہنا تھا کہ مفتی کفایت اللہ کے ٹی وی ٹاک شو کی بنیاد پر مقدمہ بنانا اظہار رائے کی آزادی پر قدغن ہے اور اظہار رائے پر قدغن آئین کی پامالی ہے۔

انھوں نے کہا کہ ٹی وی پر مولانا فضل الرحمان سے متعلق سوال کے جواب مفتی صاحب نے رٹائرڈ جنرلز کا نام لیا اور رٹائرڈ جنرلز ادارے کے زمرے میں نہیں آتا اگر رٹائرڈ جنرلز پر بات کرنا ادارے کے خلاف بات کرنا ہے تو مولانا فضل الرحمان کے خلاف بات کرنا بھی علماء اکرام کے خلاف بات کرنا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہا کہ حامد میر، جاوید لطیف، ابصار عالم اور مفتی کفایت اللہ آئین کی بالادستی کی جنگ لڑ رہے ہیں اور قانون کی حکمرانی چاہتے ہیں، آئین و قانون کی حکمرانی اور شہری حقوق کے تحفظ کےلیے آواز بلند کرتے رہیں گے۔

مفتی حافظ حسین کفایت نے کہا کہ ہم جمہوریت پر یقین رکھتے ہیں ہم نے جمہوریت کا راستہ اپنایا ہے انتخاب میں حصہ لیتے ہیں ہم سے جمہوری انداز میں بات کی جائے۔

احتجاج سے خطاب کرتے ہوئے جےیوآئی کے ضلعی جنرل سیکرٹری خالد وقار چمکنی نے کہا کہ مفتی کفایت اللہ کو رہا نہ کیا گیا تو ہم پورے ملک میں احتجاجی تحریک شروع کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ حقیقی غدار عمران خان ہے جس نے عوام کا جینا دوبھر کردیا ہے، جےیوآئی مفتی کفایت اللہ کی رہائی کا مطالبہ کرتی ہے۔

ڈاکٹر عظمت علی مہمند پیر سجاد سبحان قاری قاسم رفیق اور مفتی سیار احمد نے بھی مفتی کفایت اللہ کی رہائی کا پرزور مطالبہ کیا اور کہ رہا نہ کیا گیا تو حالات خرابی کی تمام ذمہ داری حکومت پر ہوگی۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *