ڈیفنس بخاری کمرشل میں نوجوان کو زخمی ، لڑکی کو اغوا کرلیا گیا ، پولیس سراغ لگانے میں ناکام

رپورٹ : اختر شیخ

کراچی ڈیفنس ہائوسنگ اتھارٹی کے فیز 6 ،چھوٹا بخاری کمرشل کی اللہ والی بلڈنگ کے سامنے ہفتہ اور اتوار کی درمیانی شپ راہ چلتے جوڑے پر فائرنگ کردی ،مسلحہ کار سوار ملزمان نے نوجوان لڑکے حارث سومرو کو گولیاں مار کر زخمی کردیا اور اس کے ساتھ موجود دعا منگی کو اغوا کرکے فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے ہیں .

واقعہ کے بعد علاقے میں خوف وہراس پھیل گیا ہے ، مغویہ اور ملزمان کا سراغ لگانے کے لیے تھانہ درخشاں پولیس اور حساس اداروں کے اہلکار جائے وقوع پر پہنچے۔ جہاں پر پولیس کی ابتدائی تفتیش کے مطابق یہ جوڑا بڑا بخاری کی مین اسٹریٹ کے ساتھ ملحقہ سڑک پر پیدل جا رہا تھا کہ کار میں سوار ملزمان وہاں پہنچے اور لڑکے کو فائرنگ کرکے شدید زخمی کردیا جبکہ لڑکی کو زبردستی کار میں اغوا کرکے فرار ہوگئے۔

تھانہ درخشاں پولیس کے مطابق زخمی کو فوری طور پر نیشنل میڈیکل سینٹر (NMC) منتقل کیا تاہم اسپتال والوں نے گردن پر گولی لگنے کی وجہ سے زخمی کو فی الفور آغا خان اسپتال بھیجنے کا مشورہ دیا جس کے بعد حارث سومرو کو آغا خان اسپتال منتقل کیا گیا ، جہاں اس کی شناخت حارث فتح سومرو کے نام سے ہوئی ۔ پولیس کے مطابق ابتدائی تفتیش کے دوران لڑکی کا نام دُعا نثار منگی سامنے آیا ہے ،جس کا آخری اطلاعات تک کوئی سراغ نہیں مل سکا۔ پولیس کے مطابق 23سالہ حارث سومرو کی حالت خطرے میں ہے اوراسے گردن میں گولی لگی ہے ۔ایس ایس پی ساؤتھ شیراز نذیر اور ایس پی انویسٹی گیشن فوری طور پر موقع پر پہنچ گئے تھے .

تصویر میں مغوی دعا منگی اور زخمی حارث سومرو نظر آرہے ہیں

پولیس نے اسپتال میں زخمی نوجوان حارث سے معلومات لیں جس میں اس کا کہنا ہے کہ ملزمان اس کو گولی مار کر اس کی دوست کو اغوا کرکے لے گئے ہیں ، حارث کے مطابق وہ کورنگی کا رہائشی ہے جب کہ اس واقع کے وقت وہ دونوں واک کررہے تھے ، ادھر پولیس کا کہنا ہے کہ لڑکی کے اہلخانہ نے تا حال رابطہ نہیں کیا ہے . پولیس نے اس کے بعد تھانہ درخشاں میں اقدام قتل ،اغوا کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا ہے .

آئی جی سندھ کلیم امام نے ایس ایس پی ساؤتھ سے اس واقعہ کی مکمل تفصیلات طلب کرلیں ہیں ۔ ڈاکٹر سید کلیم امام کا کہنا ہے کہ میڈیا رپورٹس کے مندرجات اورعینی شاہدین کے بیانات کی روشنی میں جملہ قانونی امور کو مؤثر بنایا جائے۔ زخمی کے والد عبدالفتح سومرو سے رابطہ کیاگیا تاہم انہوں نے فون ریسیو نہیں کیا .

تھانہ درخشاں میں درج ایف آئی آر کا عکس

الرٹ نیوز کو حاصل ہونے والی مقدمہ کی کاپی کے مطابق پولیس نے یکم دسمبر کو رات گئے 4 بجے مقدمہ نمبر 771/2019 درج کیا ہے .یہ مقدمہ زخمی لڑکے کے والد 56 سالہ عبدالفتح ولد شعبان سومرو نے درج کرایا ہے ، اس مقدمہ میں پولیس نے بجرم دفعہ 34 ، دفعہ 324 اور365 ت ب درج کرائی ہیں .

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *