سیدنا امیر حمزہؓ کی زندگی ہم سب کیلئے مشعلِ راہ ہے : عادل انصاری

حضرت امیر حمزہ

کراچی : مسلم اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کراچی ڈویژن کے ناظم محمد عادل انصاری کا کہنا ہے کہ سیدنا امیر حمزہؓ کی زندگی ہم سب کے لیے مشعل راہ ہے ۔ 

ان خیالات کا اظہار انھوں نے 15 شوال المکرم یوم سیدالشہدا کے موقع پر مسلم میڈیا سیل میں بیان دیتے ہوئے کیا ۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ اسلامی تاریخ ایسے عظیم ہیروز سے لبریز ہے، مسلمانوں کو اپنے ان اسلام کے ہیروز کی زندگیوں کا مطالعہ کرنا چاہیئے اور ان کو اپنا آئیڈیل بنانا چائیے۔

عادل انصاری نے کہا کہ ہم سب کے لیے ان کی زندگی مشعل راہ ہے، مسلم اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن آج کے دن سیدالشہداء سیدنا امیر حمزہ رضی اللہ کو خراج عقیدت اور خراج تحسین پیش کرتی ہے ۔ ساتھ میں انھوں نے حضرت حمزہؓ سے متعلق چیدہ چیدہ تاریخ بتا کر بھی ناظرین کی معلومات میں اضافہ کیا ۔

مذید پڑھیں :واٹر بورڈ دھابیجی 100 ایم جی ڈی کے فیز 1 کا ایئر والو لیک ہو گیا

ان کا کہنا تھا کہ حضرت حمزہ بن عبد المطلب حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے سگے چچا ہونے کے ساتھ ساتھ آپ علیہ اسلام کے رضاعی بھائی بھی تھے،اس لیے آپ علیہ سلام کو سیدنا امیر حمزہؓ سے بہت محبت اور دلی ہمدردی تھی، آپ علیہ السلام فرمایا کرتے تھے میرے چچاؤں میں سب سے اچھے چچا امیر حمزہؓ ہیں،اسلام کے سب سے بڑے دشمن ابو جہل نے ایک بار آپ علیہ سلام کے اوپر گستاخانہ جملے کسے اور پتھر مار کر آپ علیہ سلام کے سر مبارک کو زخمی کر دیا ۔

چناچہ سیدنا امیر حمزہ کو ابوجہل کی اس حرکت کا پتہ چلا تو قرابت کی وجہ سے جوش و غصب میں آگئے اور حرم مکہ میں جا کر تلوار کے دستے سے ابوجہل پر وار کر کے زخمی کر دیا اور فرمایا جو دین محمد کا ہے وہی میرا بھی اگر تم سچے ہو تو مجھے اسلام سے روک کر دیکھاﺅ، سیدنا حمزہؓ نے سارا واقعہ حضور کی خدمت میں عرض کیا اور کلمہ پڑھ کے ہمیشہ کے لیے مسلمان بن گئے ۔

آپ رضی اللہ کے اسلام قبول کرنے کے بعد مسلمانوں کو بہت تقویت ملی،جنگ بدر کے بعد جب غزوہ احد کا معرکہ پیش آیا تو آپ رضی اللہ عنہ نے نہایت بہادری اور جانفشانی سے معرکہ لڑا،غزوہ احد میں آپ رضی اللہ عنہ نے 31 کفار کو واصل جہنم کر کے 15 شوال المکرم سنہ 3 ھجری کو جام شہادت نوش فرمائی،آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنی چادر مبارک میں سیدالشہدا کو کفن دیا اور قبر میں تدفین کر دی گئی ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *