بااثرخاتون نے سنگل توڑا ، پولیس اہلکار سے بد تمیزی ودھمکیاں دیں ،مقدمہ درج کرلیا گیا .

ڈیفنس میں غلط ڈرائیونگ کرنے اورسگنل توڑنے پر پولیس اہلکار نے خاتون ڈرائیور کو روکا جس پر خاتون نے پولیس کومغلظات بکنا شروع کردیں . ویڈیو وائرل ہونے پر شہریوں کی جانب سے ٹریفک اہلکار سے اظہار ہمدردی کا ٹرینڈ چلایا جارہا ہے ، سیکشن آفیسر محمد نواز فیاض نے درخشاں پولیس اسٹیشن میں خاتون کے خلاف مقدمہ درج کرادیا ہے ، خاتون نے گاڑی کا دوسال سے ٹیکس ہی ادا نہیں کیا ہے۔

منگل کی صبح دس بجے سی ویو سے ڈیفنس خیابان شہباز کے علاقے میں آنے والی کار نمبر BGT-419 کو ٹریفک پولیس اہلکار نے روکا اور خیابان شجاعت اورخیابان شہباز کے سگنل توڑکرآنے کی وجہ سے چالان کرنے کے لئے دستاویزات طلب کی تو خاتون نے کسی بااثر شخص کو فون کرکے موقع پر پہنچنے کی درخواست کرتے ہوئے ٹریفک پولیس اہلکار محمد نواز فیاض کو مغلظات بکنا شروع کردیں .

جس کے بعد خاتون نے گاڑی کو شیشہ نیچے کرکے پولیس اہلکار کو کہا کہ اگر میں گاڑی آپ کے اوپر چڑھا دیتی تو آپ کیا کرسکتے تھے ،تم دوٹکے کے مرد ہو ، تیسرے جیسے میرے گھر پر نوکر ہیں ، اپنی اوقات میں رہ ورنہ منہ توڑ دوں گی ،دوٹکے کا مرد ، میں تمہیں دیکھ لوں گی . اس کے بعد خاتون گاڑی کا شیشہ چڑھا کر گاڑی بھگا کر لے گئی۔

جس کی ٹریفک اہلکار کی بنائی ہوئی ویڈیو وائرل ہوئی ،ویڈیو وائرل ہونے کے بعد سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے خاتون کا پولیس اہلکار کو ”دوٹکے کا آدمی اور جاہل کہنے سمیت مغلظات کے خلاف شدید احتجاج کیا جارہا ہے ۔ معلوم رہے مذکورہ خاتون کے پاس سفید ٹیوٹا کرولا 2016 ماڈل کی تھی ، ایکسائز ڈیپارٹمنٹ کے مطابق گاڑی کا انجن نمبر Z465807 اوررجسٹریشن 17 اکتوبر2016 کی ہے ۔ ٹیوٹا کمپنی کی اس گاڑی نے 30 جون 2017 سے ٹیکس ادا نہیں کیا ہے ۔ پیر روشن دین شاہ راشدی کے نام پرموجودہ گاڑی کوئی خاتون چلا رہی تھیں ۔

پولیس کی جانب سے وائرل کی گئی ویڈیو میں خاتون کی تصویر اور ایف آئی آر کا عکس

اس حوالے سے سی و یو ٹریفک سیکشن کے انچارج محمد نواز فیاض نے الرٹ نیوز کو بتایا کہ میں نے خاتون کو روکا تو اس نے میرے ساتھ برابرتاؤ کیا اور قانون کی خلاف ورزی کی جس کی وجہ سے اس کے خلاف تھانہ درخشاں میں مقدمہ درج کرارہا ہوں ۔معلوم رہے کہ اس کے بعد رات گئے تھانہ درخشاں میں مذکورہ گاڑی اور اس خاتون ڈرائیور کے خلاف مقدمہ نمبر 764/2019 درج کرلیا گیا ہے۔ جس میں تھانہ درخشاں پولیس نے ایس آئی او محمد نواز سیال کی مدعیت میں درج اس مقدمہ میں دفعہ 504 ، دفعہ 186 اور 279 ت ب لگائی گئی ہیں .

تھانہ درخشاں میں درج ایف آئی آر کا عکس

اس حوالے سے خاتون سے رابطہ کیا گیا تو اس کا کہنا تھا کہ میری ویڈیو بنائی گئی ہے اور اس میں سے وہ حصہ وائرل کیا گیا ہے جس میں میری باتیں ہیں تاہم ہم وکیل سے بات کررہے ہیں ،اس ٹریفک اہلکار کو میں‌ جیل کرائوں گی اور اس کو نوکری سے فارغ کرائوں گی ،اس کو معلوم نہیں ہے کہ میں کون ہوں .

خاتون کے پاس موجود پیر روشن دین شاہ راشدی کی گاڑی ،جس کو دو سال سے ایکسائز ٹیکس ادا نہیں کیا گیا

دریں اثنا ترجمان ٹریفک پولیس کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں‌کہا گیا ہے کہ خاتون نے چالان کے لئے روکے جانے پر انکار کیا اور گاڑی بھگا کر لے گئی جس کے بعد درخشاں تھانے میں مقدمہ درج کیا گیا ہے اور قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی .

ڈی آئی جی ٹریفک کے ترجمان کی جانب سے جاری ہونے والے بیان کا عکس
Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *