واٹر بورڈ : راشد صدیقی نے لیاری ندی کے غیر قانونی کنکشن بحال کر دیئے

کراچی : واٹر بورڈ اینٹی تھیفٹ سیل کے انچارج AEE راشد صدیقی نے لیاری ندی میں مافیا کے منقطع کنکشن بحال کر دیئے ۔

تفصیلات کے مطابق واٹر بورڈ اینٹی تھیفٹ سیل کے انچارج راشد صدیقی کی ٹیم نے 24 مئی بروز پیر کو لیاری ندی کے علاقے لسبیلہ پل کے نیچے غیر قانونی پانی کے نیٹ ورک کے خلاف آپریشن کیا تھا ۔ جس میں ناصر حسین شاہ کو کارکردگی رپورٹ دی گئی کہ اینٹی تھیفٹ سیل نے درجنوں کنکنشن منقطع کیئے ہیں ۔

تاہم اینٹی تھیفٹ سیل کے انچارج راشد صدیقی نے حسب معمول مبینہ طور پر لاکھوں روپے لیکر مافیا سے اپنی ڈیل کر لی ہے ۔ جس کے بعد منقطع کیئے گئے کنکشن پیر اور منگل کی درمیانی رات گئے دوبارہ بحال کر دیئے گئے ہیں ۔

الرٹ کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق ناظم آباد مسرت سینما کے علاقے میں فضل قیوم ، جمیل انصاری، طیب، علی رضا کوہستانی، سلاور خان ، ڈاکٹر محبوب، شبیر، شکیل، نوید خان ، اجمل خان آفریدی، لالہ صدیق باوانی، آسکار عباسی، رئیس شاہ، ایاز آفریدی، ولی خان، رئیس نیازی، راشد پٹھان، شفیق خان، لیاقت خان اور درجنوں کی تعداد میں نامعلوم افراد کے نیٹ ورکس پوری آب و تاب سے چل رہے ہیں ۔

مزید پڑھیں :مذہبی تعلیم اور آزادی

الرٹ کی تیار کردہ ویڈیوز کے مطابق ’’ ایک شخص پانی کے قانونی کنکشن کے نام پر غیر قانونی نیٹ ورک کے پانی کی لائن کو ٹیسٹنگ میٹر کے ذریعے چیک کرتا ہوا دیکھا جا سکتا ہے ۔ ساتھ ہی میٹر میں موجود پانی کی ریڈنگ بھی مکمل طور پر واضح ہے کہ ناظم آباد کے علاقے مسرت سینما کے قریب سے گزرنے والی لائنوں میں میٹھا پانی چوری کیا جا رہا ہے ۔

اس حوالے سے پاکسان پیپلز پارٹی کے رہنما و سماجی رہنما سہیل سمیع دہلوی کا کہنا ہے کہ مسرت سینما والے مافیا کیخلاف بھی بھرپور اور مستقل بنیادوں پر کارروائی عمل میں لائی جائے ۔ اس کے لئے ہر محاذ پر جائوں گا اور اینٹی تھیفٹ سیل کی غیر قانونی حرکات کو سامنے لائوں گا تاکہ شہریوں کا حق ان کو مل سکے ۔

پاکستان پیپلز پارٹی ضلع وسطی کراچی کی جانب سے وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ ، وزیر بلدیات سید ناصر حسین شاہ اور ایم ڈی کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ انجینئر اسداللہ خان سے اظہار تشکر کیا گیا ہے ، جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ آپ کی مہربانی سے 24 مئی بروز پیر کو کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کی جانب سے لیاری ندی کے علاقے لسبیلہ پل کے نیچے غیر قانونی پانی کے نیٹ ورک کے خلاف آپریشن کیا گیا۔

ہم امید کرتے ہیں کہ آپریشن کا دائرہ کار بڑھاتے ہوئے دیگر علاقوں لسبیلہ پل کے اطراف علی بستی , حاجی مرید گوٹھ اور متصل علاقے اس کے علاوہ نیو کراچی میں گودھرا اور خمیسو گوٹھ ، ناظم آباد میں بنگش ہوٹل مسرت سینما کے علاقے شامل ہیں جہاں درجنوں کی تعداد میں نامعلوم افراد کے نیٹ ورکس موجود ہیں کے خلاف بھی مستقل بنیادوں پر کاروائی عمل لائی جائے۔

قابل ذکر امر یہ ہے کہ گزشتہ روز لیاری ندی کے علاقے لسبیلہ پل کے نیچے کیے گٸے آپریشن میں منقطع کیے گٸے کنکشنز رات گٸے پھر جوڑ دیئے گٸے ہیں جن کے خلاف کارواٸی ناگزیر ہے ۔ یہ بھی مطالبہ کیا جاتا ہے کہ کراچی واٹر میں ان کالی بھیڑوں کو ڈھونڈا جائے جو پانی چوروں کے سہولت کار ہیں اور ان کو آپریشن سے پہلے ہی آگاہی دی جاتی ہے ۔

مذید پڑھیں :سندھ امپلائیز اولڈ ایج بینفٹ انسٹیٹیوٹ کے بورڈ آف ٹرسٹیز کی تعیناتی کی منظوری

واضح رہے کہ اس کے علاوہ نیو کراچی میں گودھرا اسٹاپ ، علی محمد گوٹھ میں سلیم خان مہمند کا وسیع نیٹ ورک جس کی جڑیں نیو کراچی اور فیڈرل بی ایریا صنعتی زون میں قائم ہیں۔ سلیم خان مہمند کے نیٹ ورک میں پاکستان پیپلز پارٹی ضلع شرقی کے ایک اہم عہدیدار جن پر حالیہ دنوں میں فائرنگ بھی ہوئی شامل ہیں ان کا نام بھی سامنے آ رہا ہے ۔ اس کے علاوہ خمیسو گوٹھ میں رجب مگسی ، امیر علی مگسی کا نیٹ ورک بھی یومیہ لاکھوں گیلن پانی چوری میں ملوث ہے ۔

ذرائع کا کہنا ہے راشد صدیقی مسلسل ناصر حسین شاہ کے نام پر شہریوں کو بلیک میل کر کے گھریلو اور صنعتی کنکنش کی فائلیں منگوا کر بھی رقم اینٹھ رہا ہے ۔

 

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *