مفتی کفایت اللہ کو عدالت نے 5 روزہ جسمانی ریمانڈ پر CTD کے حوالے کر دیا

ایبٹ آباد : جمعیت علمائے اسلام کے سابق ایم پی اے مفتی کفایت اللہ کو 5 روزہ جسمانی ریمانڈ پر سی ٹی ڈی کے حوالے کر دیا گیا ۔

سیکیورٹی اداروں کے خلاف بیان بازی کرنے پر سابق ایم پی اے اور جے یو آئی کے رہنما مفتی کفایت اللہ کے خلاف مقدمہ میں دہشت گردی کی دفعات شامل ہیں ۔

سابق ایم پی اے کو عدالت نے پانچ روزہ جسمانی ریمانڈ پر سی ٹی ڈی کے حوالے کر دیا ہے ۔ مفتی کفایت اللہ کے خلاف اس سے قبل بفہ تھانہ میں مقدمہ درج تھا ، مفتی کفایت اللہ کے خلاف 31 دسمبر کو بفہ تھانے میں مقدمہ درج کیا گیا تھا ۔

مذید پڑھیں :مفتی کفایت اللہ کی رہائی کیوں نہیں ہو سکی ؟

ادھر ایبٹ آباد دہشت گردی کی خصوصی  عدالت نے گزشہ روز پرانے مقدمہ میں دہشت گردی کی دفعہ 7ATA شامل کی جس کے بعد ان کو سی ٹی ڈی کے حوالے کیا گیا ہے ۔جس کے بعد اب آئندہ سماعت 28 مئی کو دہشت گردی کی عدالت میں ہو گی ۔

واضح رہے کہ مفتی کفایت اللہ کی گرفتاری سے سے پہلے 3 ایم پی او کے تحت کی گئی ، جس کی ضمانت ہونے کے لئے عدالت سے رجوع کیا گیا جس کے بعد انتظامیہ نے ان کی گرفتاری کو غداری کے مقدمہ میں کنورٹ کر دیا اور غداری کا بند مقدمہ بھی کھول دیا گیا ۔اس میں ضمانت کے لئے عدالت سے رجوع کیا گیا تو اس کے بعد اب دہشت گردی کی دفعات بھی مقدمہ میں درج کر لی گئی ہیں ۔

مفتی کفایت اللہ کے صاحبزادے حافظ حسین کفایت کے مطابق ایبٹ آباد عدالت میں حکومتی اقدام کو چیلنج کر دیا گیا ہے ، جس کی سماعت 24 مئی کو ہو گی ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *