پاکستان میں جماعتُ المسلمین کی جانب سے جمعہ کو نمازِِ عید ادا کی گئی

کراچی (رپورٹ/عظمت خان) پاکستان میں مجموعی طور پر بدھ ، جمعرات اور جمعہ کو تین روز مختلف شہریوں میں نماز عید ادا کی گئی ۔ جمعرات کو سرکاری سطح پر شوال کے چاند کے اعلان کے بعد عید منائی گئی ۔ وزیرستان میں بدھ کو عید منائی گئی ، جب کہ ملک کے کئی شہروں میں جماعت المسلمین کی جانب سے جمعہ کو عید منائی گئی ۔

پاکستان میں مرکزی رویت ہلال کمیٹی اور مسجد قاسم علی خان کے مفتی شہاب الدین کے درمیان شہادتوں کے حوالے ہر سال اختلافات سامنے آتے ہیں ۔تاہم جماعت المسلمین دونوں کے فیصلوں کے برعکس اپنے ہی طے کردہ اصولوں کے مطابق عید ایک روز پہلے یا ایک روز بعد مناتی ہے ۔

جماعت المسلمین کے عقائد کے مطابق صرف مسلم کی رویت کو حجت مانا جاتا ہے ۔ اور ان کی نگاہ میں صرف جماعت المسلیمین ہی کے افراد مسلم ہیں۔ لہذا جماعت المسلمین کی اپنی روئتِ ہلال کمیٹی ہے ، جو چاند کی رویت کا اعلان کرتی ہے اور ان کی کمیٹی کی تصدیق کے بعد ہی جماعت المسلمین سے تعلق رکھنے والے افراد روزہ رکھتے اور عید مناتے ہیں ۔

مذید پڑھیں :جامعۃ الرشید کے مفتی محمد کا قضا کے مسئلے پر مفتی منیب الرحمن کا رد

پاکستان میں مرکزی رویتِ ہلال کمیٹی کے چیئرمین مفتی منیب الرحمن کو ہٹانے کے بعد نئے اراکین کا انتخاب کیا گیا تھا ۔جس میں امام بادشاہی مسجد کے امام و خطیب مولانا عبدالخبیر آزاد کو چئیرمین بنایا گیا تھا ۔جس کی وجہ سے مولانا عبدالخبیر آزاد کی جانب سے پہلی عید کا چاند دیکھنے کیلئے اس بار اہتمام کیا گیا تھا ۔

اس کمیٹی کا اجلاس قدرے تاخیر سے ہونے اور مولانا ڈاکٹر یسین ظفر کی ٹیلیفونک گفتگو سے معاملہ مذید مشکوک ہو گیا تھا ۔ جس پر مفتی منیب الرحمن نے مہر ثبت کر دی تھی ۔ مفتی منیب الرحمان نے موجودہ رویت کو ماننے سے انکار کرتے ہوے ایک روزے کی قضاء ادائیگی کا اعلان کر دیا ۔

ادھر جماعت المسلمین کی جانب سے بھی تیس روزے پورے کرنے کی خبر گردش ہوئی تو اس معاملے کو بھی موجودہ حالات کے تناظر میں دیکھا جانے لگا ۔ مگر بعد از تحقیق پر معلوم ہوا ہے کہ یہ معاملہ موجودہ تنازع کا نہیں بلکہ جماعت المسلمین کے عقیدے کا مسئلہ ہے ۔ جماعت المسلمین کے علما اپنی ہی عالم دین کی رویت کو تسلیم کرتے ہیں ۔

مذید پڑھیں :روزے و اعتکاف مکمل اور عیدالفطر صحیح وقت پر ہوئی : مفتی تقی عثمانی

جماعت المسلمین کے سابق امیر مولانا مسعود (بی ایس سی) کے دور میں بھی کئی بار ایسا ہو چکا ہے کہ جماعت المسلمین نے الگ عید منائی ہے ۔ کبھی ایک دن پہلے اور کبھی ایک دن بعد عید کی جاتی ہے ۔ جماعت المسلمین کے موجودہ امیر مولانا اشفاق کے دور میں بھی یہ پہلی بار نہی ہو رہا ہے ۔ ان کے دور میں بھی کئی بار جماعت المسلمین دو دن پہلے روزہ رکھ چکی ہے اور دو دن پہلے عید منا چکی ہے۔

اس سال جماعت المسلمین کے عید کے اجتماعات ان کے مرکزی گڑھ سمجھے جانے والے علاقے کیماڑی ، ملیر کھوکھراپار ، گلبرگ کیفے پیالہ ، لیاری ، ناظم آباد ، ناظم آباد بلاک ایل لنڈی کوتل چورنگی کے قریب میدان ، رضویہ ، شاہ فیصل کالونی ، شیر شاہ ، محمود آباد ،اورنگی ٹائون میں فیکٹری کی چھت پر بیت الرضوان گلشن اقبال بلاک 13 سی میں عید میں ادا کی گئی ۔

جب کہ اس کے علاوہ کئی شہروں میں نماز عید ادا کی گئی جن میں ہری پور میں ایلیمنٹری کالج گرائونڈ ، خانپور نیشنل پارک کے عقب میں ، بلوچستان میں جماعت اصلاح المسلمین کی جانب سے ضلع صحبت پور میں ، ڈگری میں حافظ محمد اسلم طاہری نے نماز عید پڑھائی ، اصلاح المسلمین برانچ پیر محمد منگیانی گوٹھ حب میں نماز عید ادا کی گئی ، لسبیلہ زون 2 کے صدر مولانا محمد موسی منگیانی طاہری نقشبندی کی امامت میں نماز عید اد اکی گئی ۔

معلوم رہے کہ جماعت المسلمین کی جانب سے خواتین کو بھی عید گاہ میں نماز عید پڑھائی جاتی ہے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *