تھانہ کلری کے ASI چوہدری شاہد نے کھلے عام گٹکا فروخت کرانا شروع کر دیا

کراچی : تھانے کلری کی حدود واقع میمن سوسائٹی کی گلی نمبر 5 کے جمانی محلہ کے کارنر ہر کھلے عام گٹکا مافیا ڈان سرگرم ہے ۔ جب کہ بدنام زمانہ شیرو اور شکور نے انٹیلی جنس افسر اے ایس آئی چوہدری شاہد سے اجازت نامہ لیکر گٹکے کی منڈی سجا دی ہے ۔

زرائع نے بتایا کہ عرصہ دراز سے گٹکے مافیا کے ڈان شیرو اور شکور اسی علاقے میں گٹکے کا گناٰؤنہ کاروبار کر رہے ہیں ۔ ایس ایچ او کلری ذوالفقار باجوہ کو بھی مبینہ طور پرچوہدری شاہد پیسہ پہنچا رہا ہے ۔

زرائع نے مزید بتایا کہ 2 دن قبل تھانے کلری میں تعینات انٹیلیجنس افسر چوہدری شاہد شیرو سے موکل کے نام پر مبینہ طور پر 10000 ہزار روپے اور شکور سے 5000 ہزار روپے لیکر کھلے عام چلانے کی اجازت دے کر گیا ہے ۔ زرائع نے بتایا کہ بدنام زمانہ گٹکے کا ڈان شیرو اور شکور متعدد بار جیل بھی جا چکے ہیں تاہم اس کے باوجود گھناؤنے کاروبار سے باز نہیں آتے ۔

مذید پڑھیں :بوٹ بیسن SHO ایک واردات میں سہولت کار دوسری میں 2 کلو سونے کے مالک بن گئے

جب کہ سپریم کورٹ آف پاکستان کے سخت احکامات کے باوجود اس مہلک دھندے کو محکمہ پولیس میں موجود کالی بھیڑیں ، انٹیلیجنس افسر اے ایس آئی چوہدری شاہد آکسیجن پہنچا رہی ہیں ۔ذرائع بتاتے ہیں اس سے قبل بھی چوہدری شاہد اس مافیا کی سہولت کاری میں معطل ہو چکا ہے مگر 22 دسمبر کو ایک بار پھر بحال ہو کر تھانے کلری میں پہنچ کر پھر وہی کام شروع کرا دیئے ہیں ۔

عرصہ دراز سے تعینات چوہدری شاہد تھانے کلری میں گٹکے مافیا سمیت آرگنائز کرائم کروانے والوں کی مکمل سر پرستی کرنے میں پیش پیش ہیں ۔ذرائع بتاتے ہیں لیاری گینگ وار کے بدنام زمانہ مُلزم زاہد کو کئی مقدمات میں نامزدہ ہونے کے باوجود اپنے ساتھ رکھ کر کرائم کرائے جانے کی اطلاعات بھی ہیں ۔

مذید پڑھیں :ڈیپارٹمنٹل پروموٹ ہونے والے ہیڈ کانسٹیبلان کیلئے تھانہ ملازئی ٹانک میں ایک پروقار تقریب کا انعقاد

ادھر تھانے کی حدود میں چھینا چھپٹی اور منشیات چلانے کے لیئے زاہد کا استعمال کرنے میں چوہدری شاہد پیش پیش ہے ۔ یاد رہے چوہدری شاہد اپنے آپ کو ایس ایچ او کلری کے نام سے شناخت کرواتا ہے ۔جس کے لئے ایس ایچ او کلری نے اسے کھلی اجازت بھی دے رکھی ہے ۔

علامہ مکینوں نے آئی جی سندھ مشتاق مہر ، اے آئی جی کراچی عمران یعقوب منہاس ، ڈی آئی جی ساؤتھ جاوید اکبر ریاض ، ایس ایس پی سٹی سر فراز نواز ، ایس پی سٹی عبریز علی عباسی ان کے خلاف جلد جلد کاروائی عمل میں لا کر محکمہ پولیس کی عزت کو تار تار کرنے والوں کے خلاف محکمانہ کاروائی کرے اور چوہدری شاہد سمیت ایس ایچ او کلری کی مکمل فیئر انکوائیری کرائیں تاکہ جرائم پر قابو پایا جا سکے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *