جامعہ بنوری ٹائون کے ختم القرآن کی دعا میں ہزاروں کے مجمع پر رقت طاری

کراچی :(رپورٹ/عظمت خان) عظیم دینی درسگارہ جامعۃ العلوم الاسلامیہ علامہ یوسف بنوری ٹائون کراچی میں تراویخ میں ختم القرآن الکریم کی دعا میں ہزاروں افراد امڈ آئے ۔ امام و خطیب مولانا مولانا یوسف حسن طاہر کی دعا میں رقت آمیز مناظر دیکھنے کو ملے ۔

مسجد ، مدرسے کے احاطے کے اطراف میں بھی دعا میں شامل ہونے والے عقیدت مندوں کی بڑی تعداد شریک رہی ۔

جامعۃ العلوم الاسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاون کراچی میں ہر سال نماز تراویح میں بڑی تعداد شریک ہوتی ہے ۔ مذکورہ مسجد کی روحانیت حاصل کرنے اور قاری قرآن کی مخوص انداز میں قرآن کریم پڑھنے کی وجہ سے اطراف کے نمازیوں کے علاوہ بھی قرب و جوار کے نمازی باقاعدہ تمام تروایح میں شامل ہوتے ہیں ۔

جامعہ بنوری ٹائون کی مسجد کے علاوہ مدرسے میں بھی مختلف دفاتر اور اقامت گاہ میں دیگر اساتذہ و حفاظ قرآن کریم سناتے ہیں تاہم بڑی جماعت مسجد میں ہوتی ہے ۔

مذید پڑھیں :مَجمع العلُوم الاسلامیہ کے نام سے نیا مدرسہ بورڈ قائم ، کراچی کے 2 بڑے مدارس نے عملاً وفاق المدارس سے راہیں جدا کر لیں

جہاں یومیہ سیکڑوں نمازی تراویح ادا کرتے ہیں ۔ 28ویں روزے کی شب 29 ویں رات کو قرآن کریم نماز تراویح میں ختم کیا گیا جس کے بعد مختصر تقریب منعقد کی گئی جس میں حمد باری تعالی ، حضور نبی کریم ﷺ کی شان اقدس میں گلہائے عقیدت پیش کئے گئے اور اس کے بعد امام و خطیب نے بھی نعت شریف پڑھی ۔

اس دوران مسجد کا مرکزی ہال ، صحن ، بالائی ہال ، مسجد کے باہر دفاتر ایریا ، وضو خانے کے قریب نماز جنازہ کی جگہ ، گیٹ سے باہر عقیدت مندوں کی بڑی تعداد شریک ہوئی ۔ ہزاروں کی تعداد میں لوگوں کی آمد کے پیش نظر آپریشن پولیس اور ٹریفک پولیس نے ایس او پیز پر خصوصی عمل درآمد کرا رکھا تھا ۔

مذید پڑھیں :مفتی تقی عثمانی کا مجمع العلوم الاسلامیہ سے لا تعلقی کا اعلان

جب کہ اس تقریب میں دیگر مسائد کے آئمہ ، علمائے کرام کی بڑی تعداد بھی شریک رہی ۔ جامعہ مسجد بنوری ٹائون کے امام و خطیب مولانا یوسف حسن طاہر نے دعا کرائی ۔ 37 منٹ کی طویل دعا میں رقت آمیز مناظر دیکھنے میں آئے ۔ حسب روایت مولانا نے گِڑ گِڑا کر اللہ کے حضور التجائیں کیں اور مجمع میں رقت طاری ہو گئی ۔

مجمع کی بڑی تعداد بھی اللہ تعالی کے حضور گناہوں کی معافی ، مرحومین کے درجات کی بلندی ، ملکی سلامتی ، عالم اسلام پر کفر کی یلغار سے نجات ، کرونا کی وبا سے چھٹکارہ کی دعا پر آمین کہتی رہی اور مجمع پر رقت طاری ہونے کے بعد ہچکیاں بند گئیں ۔

الرٹ کی جانب سے مذکورہ رقت آمیز دعا کو قارئین الرٹ کے لئے محفوظ بنایا گیا ہے جسے درج ذیل لنک پر کلک کر کے سنا جا سکتا ہے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *