فلسطین اور کشمیر کے بعد اب افغانستان میں صہیونی سرگرمیاں قابلِ تشویش ہیں : فلسطین فاؤنڈیشن

کراچی : فلسطین فاؤنڈیشن پاکستان کے سیکرٹری جنرل ڈاکٹر صابر ابو مریم اور سرپرست رہنماؤں محفوظ یار خان ، مسلم پرویز ، مولانا باقر زیدی، علامہ قاضی احمد نورانی، ارشد نقوی، اسرار عباسی،علامہ سجاد شبیر ، میجر (ر) قمر عباس، مطلوب اعوان ، ازہر ہمدانی، کرامت علی، عرم بٹ اور دیگرنے مسجد اقصی پر اسرائیلی مسلسل حملوں اور جارحیت کی شدید مذمت کی ہے ۔

رہنماوں نے اپنے مشترکہ بیان میں کہنا تھا کہ فلسطینی مسلمانوں کو مسجد اقصی میں عبادت کے دوران نشانہ بنایا گیا ۔ گزشتہ دو دنوں میں اسرائیلی جارحیت کے نتیجہ میں سیکڑوں فلسطینی زخمی ہیں فلسطین میں بسنے والے مسلمان اور عیسائی سب صہیونیوں کے مظالم کا نشانہ بن رہے ہیں ۔

عبادت گاہوں اور مساجد میں فلسطینیوں کو دہشتگردی کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ قبلہ اوّل پر صہیونی یلغار اور افغانستان میں بچیوں کے اسکول پر دہشت گردانہ حملہ صہیونی دہشت گردی کا تسلسل ہے اسرائیل اپنے پنجے افغانستان میں جما کر پاکستان اور خطے کو غیر مستحکم کرنا چاہتا ہے ۔

مذید پڑھیں :بوٹ بیسن SHO ایک واردات میں سہولت کار دوسری میں 2 کلو سونے کے مالک بن گئے

فلسطین اور کشمیر کے بعد اب افغانستان میں بھی صہیونی سرگرمیاں قابل تشویش ہیں۔ فلسطین میں جاری اسرائیلی ظلم و ستم پر عالمی برادری اور ادارے خاموش کیوں ُ ہیں انہوں نے کہا کہ پاکستان کے عوام فلسطین میں جاری دہشتگردانہ صہیونی کاروائیوں کی خلاف سراپا احتجاج ہیں ۔

قبلہ او بیت المقدس پر غاصب صہیونیوں کے دہشتگردانہ حملوں کی شدیدمذت کرتے ہیں فلسطین و افغانستان میں معصوم بچوں سمیت دیگر شہادتوں پر دلی افسوس ہے شہداء کے بلندی درجات کیلئے دعا گو ہیں ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *