بہار کے زورآور لیڈر شہاب الدین عر باہو بلی کا کورونا سے انتقال

نئی دہلی: راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے لیڈر اور سابق رکن پارلیمان محمد شہاب الدین کا ہفتہ کے روز کورونا سے انتقال کر گئے۔ تہاڑ جیل کے ڈی جی سندیپ گوئل نے شہاب الدین کی موت کی تصدیق کی ہے۔

وہ اغواء اور قتل کے الزامات کے تحت دہلی کی تہاڑ جیل میں عمر قید کی سزا کاٹ رہے تھے، کوورونا کے باعث دہلی کے ایک اسپتال میں وفات پاگئے ۔ ان کے سیاسی مخالفین انہیں باہو بلی یعنی طاقتور آدمی کہا کرتے تھے ۔

مزید پڑھیں: اداکارہ مرینہ خان بھی کورونا وائرس کا شکار

محمد شہاب الدین ہندوستان کے صوبہ بہار کے ایک معروف سیاستدان اور رکن پارلیمنٹ ہیں ۔ان کے سیاسی مخالفین انہیں بہار کا ڈون اور باہو بلی یعنی طاقتور آدمی کہتے ہیں جنتا دل اور راشٹریہ جنتا پارٹی سے تعلق رکھنے والے محمد شہاب الدین نے 1990ء میں سیاست میں قدم رکھا اور انتخابی حلقہ سیون ریاست بہار سے رکن پارلیمنٹ بھی رہے ہیں ۔

انہیں کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا کے ایک رہنماء چھوٹے لال گپتا کے اغوا اور غائب کرنے کے الزام میں انتخابات میں حصہ لینے کے لئے نااہل قرار دیدیا گیا تھا اور اس الزام انہیں عمر قید کی سزا بھی سنائی گئی تھی ۔

مزید پڑھیں : بھارت میں کورونا بےقابو، زندگی مہنگی اور موت سستی کردی

شہاب الدین پر سابق طالب علم رہنماء چندر شیکھر پرشاد سمیت کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا کے 15 کارکنوں کے قتل کا الزام بھی عائد کیا گیا تھا ۔ جس پر وہ عدالت کی جانب سے ضمانت پر ہیں ۔ محمد شہاب الدین 1996ء سے 2004ء تک چار مرتبہ انتخابی حلقہ سیون بہار سے ہندوستان کی پارلیمنٹ کے رکن منتخب ہوچکے ہیں ۔ 10 مئی 1967ء کو جنم لینے والے محمد شہاب الدین عرف باہو بلی تعلیمی لحاظ سے ایم اے اور سیاسیات میں پی ایچ ڈی ہیں ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *