دوستوں کے ہمراہ کچھ خوشگوار لمحات

تحریر : مولانا ڈاکٹر قاسم محمود

ہم فکر اور ہم آہنگ دوست خدا کی بڑی نعمت ہوتے ہیں ۔ آج کل کا دور بہت تیز رفتار ہے۔ آدمی کو آدمی کیلئے بلکہ بسا اوقات خود کیلئے بھی فرصت نہیں ہوتی، زندگی اتنی عجیب سی مصروف اور تیز تر ہو گئی ہے ۔ ایسے میں ہم فکر دوستوں کا اکٹھا ہونا اور ایک دوسرے کے احوال سے با خبر ہونا بڑی فرحت بخش سرگرمی بن جاتی ہے ۔ دوستوں سے مل بیٹھ کر، تبادلہ خیال کرکے تازہ دم محسوس کرتا ہے ۔ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ ساری ذہنی تکان دور ہو گئی ہے ۔

کل بہت ہی شارٹ نوٹس پر میڈیا اور سوشل میڈیا سے تعلق رکھنے والے چند قریبی دوستوں کو افطار ڈنر پر زحمت دی ۔ رمضان شریف میں ایسی دعوتیں اور نشستیں ہماری خوبصورت تہذیبی روایت کا حصہ ہیں۔ یہ ایک اچھی رسم اور محبت پرور سرگرمی ہے۔ تاہم سخت گرمی اور پھر شہر میں لاک ڈاؤن کے پیش نظر ٹریفک جام کی پیکڈ صورت حال کے باعث یہ خیال بھی ستاتا رہا کہ اس عالم میں دوستوں کو زحمت دینا مناسب بھی ہے یا نہیں ۔

مذید پڑھیں :ہلال احمر کے زیر اہتمام عالمی ریڈکراس/ ریڈکریسنٹ ڈے کا انقعاد

مگر دوستوں کے ساتھ مل بیٹھنے کا تقاضا اس شدت سے محسوس کر رہا تھا کہ چند قریبی دوستوں کو یہ زحمت دیتے ہی بنی، دوستوں نے بھی کمال محبت کا ثبوت دیتے ہوئے شہر کے مختلف اور دور دراز علاقوں سے سفر کا تردد گوارا کیا اور افطار کیلئے غریب خانے تشریف لائے ۔

افطار اور ڈنر کے دوران اور بعد میں اچھی نشست رہی۔ ملکی سیاسی صورتحال اور ایجوکیشن و مدارس کے معاملات پر تفصیلی تبادلہ خیال ہوا اور اچھی فوڈ فار تھاٹ میسر آئی۔ میں تشریف لانے والے تمام دوستوں سابق چیئرمین مدرسہ ایجوکیشن بورڈ جناب ڈاکٹر عامر طاسین صاحب، جناب عظمت خان , نیوز ایڈیٹر الرٹ ڈاٹ کام صاحب، جناب مولانا قطب الدین عابد صاحب، جناب عنایت شمسی روزنامہ اسلام ، جناب عبد الحق صاحب روزنامہ امت، جناب شاکر احمد خان اے آر وائی، جناب اختر شیخ ، بیورو چیف الرٹ ڈاٹ کام ، جناب اختر نواز وقت نیوز ، معروف سوشل میڈیا ایکٹوسٹ جناب عمر صاحب المعروف بلیک لائٹ عمر ، جناب اظہر عالم شامل تھے ۔ میں مختصر نوٹس پر عزت افزائی کیلئے تشریف لانے پر ان تمام دوستوں کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔ کچھ دوست احباب ٹریفک جام میں پھنس کر تشریف نہ لا سکے۔ اللہ تعالیٰ سب کو بہترین جزائے خیر عطا فرمائے، آمین ۔

Comments: 1

Your email address will not be published. Required fields are marked with *

  1. السلام علیکم
    مولانا ڈاکٹر قاسم محمود صاحب آپ سے یہ میری پہلی ملاقات ہے جس کے لیے میں آپ اور بالخصوص عنایت شمسی بھائی کا مشکور و ممنون ہوں، آپ نے اس خوبصورت افطار و ڈنر پر مجھے اور ساتھیوں کو مل بیٹھنے اور دلچسپ گفتگو کا موقع دیا، آپ کا خصوصی شکریہ ۔۔