گرینڈ ہیلتھ الائنس نے KPK اسمبلی باہر دھرنا دینے کا عندیہ دے دیا .

خیبر پختون خواہ

گرینڈ ہیلتھ آلائینس کے زیرِاہتمام خیبر پختون خواہ کے مختلف اضلاع میں احتجاج کیا گیا ، منگل کو صوبے بھر کے ہر ضلع میں مین شاہراہوں کو بند کرکے نجکاری کے خلاف شدید نعرے بازی کی گئی ،اس موقع پر مظاہریں نے پشاور میں مین یونیورسٹی روڈ کو بھی بند رکھا اور جس میں عوام بھی شامل ہو گئے ۔

اسپتالوں کی نجکاری کے خلاف گرینڈ ہیلتھ الائنس کی جانب سے تحریک جاری رکھی ہوئی ہے جبکہ حکومت کی جانب سے معاملے کو حل کرنے کے بجائے ہٹ دھرمی کا مطاہرہ جاری رکھا جارہا ہے جس کی وجہ سے ڈاکٹروں کے ساتھ ساتھ عوام بھی سراپا احتجاج نظر آرہی ہے ۔

گرینڈ ہیلتھ الائنس کے ڈاکٹروں نے اعلان کیا ہے کہ بدھ کو بھی بدستور احتجاج جاری رہے گا ۔ تمام ہسپتالوں کے الیکٹیو سروسز بمع پولیو مہم کا بھی بائیکاٹ جاری رہے گا۔ انہوں نے اعلان کیا ہے کہ اگلے ہفتے سے خیبر پختون اسمبلی کے سامنے دھرنا دیا جائے گا اور اِن ڈور سروسز بائیکاٹ بھی جاری رکھا جائے گا ۔

معلوم رہے کہ وفاقی و صوبائی حکومت سے گرینڈ ہیلتھ الائنس کے مذاکرات کا پہلا مرحلہ حکومتی عدم دلچسپی کیوجہ سے تعطل کا شکار رہا ہے ۔تاہم اب صوبائی حکومت نے گرینڈ یلتھ الائنس کو پھرمختلف ذرائع سے مذاکرات کے لئے گرین سگنل دیا ہے جس کا خیر مقدم کیا جارہا ہے ۔

گرینڈ ہیلتھ کے ترجمان ڈاکٹرحضرت اکبر کا کہنا ہے کہ ہم نے مذاکرات سے کبھی بھی انکار نہیں کیا اور نہ کرینگے ۔ مذاکرات کیلئے ہر وقت تیار ہیں لیکن دھمکی اور مذاکرات دونوں ایک ساتھ نہیں چل سکتے۔ پہلے مذاکراتی مرحلے میں ہونے والی غلطیوں سے اجتناب کرنا چاہئیے ۔

ان کا مذید کہنا ہے کپ ہم سنجیدہ اور بامقصد مذاکرات چاہتے ہیں لیکن مذاکرات کی کامیابی تک احتجاج ختم نہیں کرسکتے ۔ مذاکرات اور احتجاج کے حوالے سے کسی بھی قسم کی رہنمائی اور تفصیلات کیلئے ڈاکٹر سیراج السلام کورآڈینٹر ہونگے ۔ ہر قسم کے معلومات جی ایچ اے سنٹر سے فراہم ہونگے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *