جمال خاشقجی قتل کیس: ترکی نے سعودی عرب کے عدالتی فیصلے کی حمایت کردی

جمال خاشقجی قتل کیس: ترکی نے سعودی عرب کے عدالتی فیصلے کی حمایت کردی

ترکی کی جانب سے سرکاری سطح پر پہلی مرتبہ مقتول صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے معاملے میں سعودی عرب کی عدالتی کارروائی کی حمایت کا اعلان سامنے آگیا ہے ۔

گزشتہ پیر کو ترک صدارتی ترجمان قالین نے پریس کانفرنس میں مصر اورسعودی عرب کے ساتھ تعلقات کے حوالے سے بڑی مفصل اور مفید بات چیت کی۔

ترک صدارتی ترجمان نے اکتوبر2018 میں استنبول میں سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قتل میں ملوث افراد کو سعودی عرب کے عدالتی فیصلے کی حمایت کی ہے ۔ یہ ترکی کی جانب سے اس واقعہ کے بعد پہلا بیان ہے جس سے قبل دونوں ممالک کے درمیان اچھے تعلقات کشیدہ ہوگئے تھے ۔
ترک صدارتی ترجمان نے مصر کےساتھ تعلقات بہتر بنانے لئے بات چیت کی تصدیق بھی کی ہے اوربتایا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان مئی کے پہلے ہفتے میں انٹیلی جنس سطح پر ملاقات ہوگی ۔

مبصرین اس بیان کو بہت بڑی تبدیلی قراردے رہے ہیں ۔ ترکی کا کہناہے کہ بحر ابیض متوسط اور لیبیا کے معاملے پر مصر کو ساتھ لیکر چلے بغیر ترکی وہ منصوبے پورے نہیں کرسکتا جن کے لئے ترکی کئی سالوں سے کوشش کررہاہے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *