سعودیہ، وبا کے پیش نظر مساجد میں تراویح اور قیام اللیل ساتھ ادا کرنے کی ہدایت

سعودی عرب (ویب ڈیسک) : سعودی وزارت اسلامی امور و دعوت و رہنمائی نے نئی ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ اتوار دو مئی سے سعودی عرب کی تمام مساجد میں تراویح اور تہجد دونوں ایک ساتھ ادا کی جائیں گی۔

ہدایات کے مطابق تہجد یا قیام اللیل کو الگ سے ادا کرنے کی اجازت نہیں ہو گی اور قیام اللیل کی نماز 30 منٹ سے زیادہ کی نہیں ہونی چاہیے۔ تراویح، تہجد اور عشا کا کل دورانیہ 30 منٹ کا ہوگا۔ تینوں نمازیں نصف گھنٹے میں اد کرنا ہوں گی۔

وزارت نے ہدایت کی کہ سب اس کی پابندی کریں۔ کوئی بھی شخص تہجد کی نماز اور تراویح سے الگ ادا کرنے کی کوشش نہ کرے۔

مزید پڑھیں: ریاستِ مدینہ میں پنجاب کی 437 مساجد میں اعتکاف پر پابندی عائد

یاد رہے کہ وزیر اسلامی امور و دعوت رہنمائی شیخ ڈاکٹر عبداللطیف آل الشیخ نے رمضان سے دو روز قبل بیان جاری کرکے کہا تھا کہ سعودی عرب میں نئے کورونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے ضروری اقدامات کا جائزہ لینے والی کمیٹی اور وزیر صحت کی ہدایت کے مطابق عشا کی نماز، تراویح اور تہجد ایک ساتھ ادا کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

کمیٹی کی سفارش پر تمام جامع مساجد اور چھوٹی مساجد میں تراویح اور تہجد کی نماز عشا کے ساتھ تیس منٹ کے اندر ادا کرنا ہوں گی۔مقصد یہ ہے کہ نمازی مساجد میں کم سے کم وقت کے لیے جمع ہوں۔ اس موقع پر زیادہ وقت تک مساجد میں لوگوں کے جمع ہونے سے وائرس پھیلنے کے خطرات بڑھنے کا امکان ہے

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *