واٹر بورڈ کو افسران کی جعلی پروموشن کرنے سے روک دیا گیا ،

واٹر بورڈ کے افسران جعلی پروموشن کرنے کی تیاری کررہے ہیں ،

رپورٹ: اختر شیخ

واٹر بورڈ کے افسران جعلی پروموشن کرنے کی تیاری کررہے ہیں،اس حوالے سے شہاب اوستونے نمائندہ الرٹ نیوز کو بتایا کہ میں نے دیکھا کہ واٹر بورڈ کے افسران ایک بار غیر قانونی طرز پر ڈی پی سی کرکے افسران کو نوازنا چاہ رہے تھے۔جس پر میں نے سیکرٹری بلدیات کو نوٹس بھیجا کہ اگر خلاف ضابطہ طور پر حسب ماضی پروموشن کی گئیں تو اس صورت میں توہین عدالت کا کیس دائر کیا جائے گا۔

سیکرٹری بلدیات کو لکھے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ واٹربورڈ کے افسران سنیارٹی لسٹ بنائے بغیر سنیارٹی دینا غیرقانونی ہے،ہم نے واٹر کمیشن میں بھی اس حوالے سے نشاندہی کی تھی،لہذاہ ریکارڈ کے مطابق اور جس دن سے کسی کی تقرری ہوئی ہے اسی دن سے سنیارٹی کی جائے،میرٹ کی بنیاد پرافسران کو حق دیا جائے،

معلوم رہے کہ واٹر بورڈ کے افسران جعل سازی کے ذریعے من مانی کرتے ہوئے پروموشن کرنے کی تیاری کررہے تھے،جن میں سر فہرست متحدہ سے تعلق رکھنے والے شعیب تغلق شامل تھے۔جن میں وہ خود کوغیر قانونی طور پر گریڈ 20میں ترقی دلواکرڈپٹی منیجنگ ڈائریکٹر ہیومن ریسورس کنفرم کرانے کی تیاری کررہے ہیں جبکہ اپنے ساتھی عمران اقبال زیدی کو غیر قانونی طو رپر ترقی دلواکراسے ڈائریکٹر فنانس سے ڈپٹی منیجنگ ڈائریکٹر فنانس دلوانا چاہ رہے ہیں او ر اسی طرح غیر قانونی طو رر محمد ثاقب کو ترقی دلوا کرڈپٹی منیجنگ ڈائریکٹر ریونیو کنفرم کرنا چاہ رہے تھے۔

الرٹ کو ملنے والی دستاویزات کے مطابق عمران اقبال زیدی نے کچھ عرصہ قبل جعل سازی سے ایم بی اے کی ڈگری بنوا کر اسے ہیومن ریسورس ڈیپارٹمنٹ میں جمع کرایا ہے ، جب کہ عمران اقبال زیدی نے بغیر کوئی کلاس لئے یہ ڈگری جعل سازی سے بنوائی ہے ، جس کے لئے انہوں نے 20 لاکھ روپے یونیورسٹی کے بروکر سے مل کر یونیورسٹی کی انتظامیہ کو دیئے ہیں ، جس کا تمام ریکارڈ الرٹ نیوز کے پاس موجود ہے۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *