حافظ ابوبکر شیخ کی رحلت JUI کیلئے بڑا نقصان ہے : مولانا فضل الرحمن

اسلام آباد : جمعیت علماء اسلام کے ترجمان میگزین الجمعیت کے ڈپٹی ایڈیٹر حافظ ابو بکر شیخ  لاہور میں انتقال کر گئے ۔ وہ دو روز قبل ایک ٹریفک حادثے میں زخمی ہو گئے تھے ۔حافظ ابوبکر شیخ کو سر اور پسلیوں میں چوٹیں آئی تھیں ۔جنہیں  میو اسپتال منتقل کر دیا گیا تھا ۔

جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی ) سربراہ مولانا فضل الرحمن کا حافظ ابوبکر شیخ کی وفات پر گہرے رنج اور غم کا اظہار ، اہل خانہ سے تعزیت

مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ حافظ ابوبکر شیخ جے یو آئی کے دیرینہ نظریاتی کا رکن تھے  ۔ ابتداء سے ہی وہ میرے رفیق رہے ۔ اچھے برے وقت میں جے یو آئی کے ساتھ وابستہ رہے ۔ نظریاتی حوالے سے طویل عرصہ کارکنوں کی تربیت کرتے رہے ۔جمعیۃ علماء کے لئے ان کی قلمی خدمات ہمیشہ یاد رکھی جائیں گی ۔

مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ دعا ہے کہ اللہ کریم حافظ صاحب کی مغفرت فرمائے ،ان کی لغزشوں سے درگذر فرمائے اور انہیں اعلی علیین میں مقام عطاء فرمائے ۔ دکھ اور غم کی اس گھڑی میں ان کے اہل خانہ سے اظہار تعزیت کرتا ہوں اور ان کے غم میں برابر کا شریک ہوں ۔

مذید پڑھیں :سندھ ہائیکورٹ نے سرکاری ملازمین کی ترقیّوں کا نیا فارمولہ دے دیا : رپورٹ

جے یو آئی کے مرکزی سیکریٹری جنرل سنیٹر مولانا عبد الغفور حیدری ،اکرم خان درانی ،،مولانا ابو الفتح محمد یوسف ،مولانا امجد خان ،اسلم غوری اور دیگر کی حافظ ابوبکر شیخ کی وفات پر گہرے رنج اور غم کا اظہار ،بلندی درجات کے لئے دعائے مغفرت کی ہے ۔

اسلم غوری کا کہنا ہے کہ حافظ ابوبکر شیخ علمی اور عملی میدان میں جے یو آئی کے مضبوط نظریاتی کارکن تھے ۔ہم اپنے پرانے دوست اور رفیق سے محروم ہو گئے ۔ حافظ ابوبکر شیخ کا شمار جماعت کے فکری رہنماؤں میں ہوتا تھا ۔ ہمیشہ کارکنوں کی تربیت کے حوالے سے فکر مند رہتے تھے ۔

اسلم غوری کا کہنا ہے کہ حافظ ابوبکر شیخ کی سیاسی ،سماجی اور قلمی خدمات ہمیشہ یاد رکھی جائیں گی ۔ دعا ہے کہ اللہ کریم حافظ صاحب کی مغفرت فرمائے ،انکی لغزشوں سے درگذر فرمائے اور انہیں اعلی علیین میں مقام عطاء فرمائے ۔ اہل خانہ کے غم میں برابر کے شریک ہیں ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *