بھارت، کورونا کی تباہ کاریاں جاری ہیں، فی ایمبولینس 22 لاشیں، مردہ خانے بھی بھر گئے

بھارت میں کورونا سے تباہ کاریاں جاری ہیں، مہاراشٹر کے علاقے امبا جوگائی میں ایمبولینس کم پڑگئیں، ایک ایمبولینس میں22 لاشیں لےجانی پڑیں۔

بھارتی میڈیا کے مطاق گجرات کے شہر سورت کے اسپتالوں میں آکسیجن کی شدید قلت کا سامنا ہے، آکسیجن سپلائی بحال ہونےتک نئےکورونا مریض اسپتال میں داخل نہیں کیے جائیں گے آکسیجن قلت سے سورت کے اسپتالوں میں زیرعلاج 4 ہزار مریضوں کو خطرہ ہے۔

بھارت کے شہر پٹیالہ میں 24 گھنٹوں کے دوران کورونا میں مبتلا 31 افراد ہلاک ہوگئے۔ بڑی تعداد میں کورونا سے اموات ، کے نتیجے میں پٹیالہ سول اسپتال کے مردہ خانے میں جگہ کم پڑ گئی۔ کئی لاشیں پٹیالہ کے اسپتال کے باہر کھڑی ایمبولینس میں رکھی گئی ہیں۔

مزید پڑھیں: روزنامہ دیانت کے چیف ایڈیٹر نجم الدین شیخ کی والدہ انتقال کرگئیں

بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ مہاراشٹرمیں ک ورونا مریض بڑھنے پر مقامی طبی انفرااسٹرکچ رپر دباؤ بڑھ گیا، کرناٹکا میں لاک ڈاؤن کی پابندیاں 10 مئی تک برقرار رہیں گی، ریاست کرناٹکا میں آج سے 14 روز کا لاک ڈاؤن نافذ ہے۔

دوسری جانب بھارت میں کورونا کی صورتحال پرعالمی ادارہ صحت نے بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت میں بڑی تعداد میں لوگوں کے اسپتال جانے سے مسائل پیدا ہو رہے ہیں، کورونا وائرس میں مبتلا افراد کی گھر میں رہتے ہوئے بھی کیئر کی جاسکتی ہے بھارت کیلئے 4 ہزار آکسیجن کنسنٹریٹرز بھجوانے کیلئےکام کر رہے ہیں۔

ڈبلیو ایچ او کا کہنا ہے کہ بھارت میں کورونا کی تین اقسام موجود ہیں، بھارت میں کورونا کی دوسری لہر کا سبب تین اقسام بھی ہوسکتی ہیں بھارت میں حالیہ بڑے اجتماعات سمیت دیگر عوامل بھی کورونا پھیلانے میں شامل ہیں۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *