آزادی مارچ کے شرکاء کیلئے صرف 60 بیت الخلاء ، 500 عارضی قائم کرنے کی تیاری

آزادی مارچ کے لاکھوں افراد کے وضو کے لئے اتوار بازار کے 50 باتھ رومز نا کافی قرار دیکر 500 عارضی باتھ روم بنانے کی اجازت طلب کی گئی ہے، استعمال ہونے والی بجلی کے بل آزادی مارچ کی انتظامیہ ادا کرے گی ، پانی کی فراہمی اسلام آباد انتظامیہ ٹینکروں کے ذریعے کرے گی.

مولانا فضل الرحمن کے آزادی مارچ کے لاکھوں افراد اسلام آباد پہنچ چکے ہیں۔جن کے لئے کی گئی تیاریاں ناکافی قراردی جارہی ہیں۔ انتظامیہ اور جے یو آئی کے درمیان طے پانے والے معاہدے کے مطابق دھرنے کے لیے سیکٹر ایچ نائن میں اتوار بازار کے پارکنگ گراؤنڈ مختص کیا گیا ہے جس کی زمین کو بلڈوزر کی مدد سے ہموار کیا گیا ہے.

اسلام آباد انتظامیہ سے مارچ کے شرکا کے لیے پانچ سے چھ ہزار ٹوائلٹس بنوانے کی بھی استدعا کی گئی تھی، لیکن اس حوالے سے اسلام آباد انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ’اتوار بازار میں 50 باتھ روم کے علاوہ میٹرو ڈپو دس باتھ روم کو ملا کر 60 باتھ رومز بن جاتے ہیں،اسلام آباد انتظامیہ کا کہنا ہے کہ مارچ کے شرکا کی تعداد کا حساب لگا کر مزید انتظام کر دیا جائے گا۔معاہدے کے تحت شرکا کو ٹینکروں کے ذریعے پانی فراہم کیا جائے گا، جبکہ بجلی کا بندوبست بھی اسلام آباد انتظامیہ کرے گی لیکن اس کے لیے الگ میٹرز لگائے جائیں گے تاکہ جو بل بنے وہ آزادی مارچ کی انتظامیہ خود ادا کرے۔

اس طرح کھانے پینے کا بندوبست آزادی مارچ کے شرکا خود کریں گے اور ساؤنڈ سسٹم اور لائٹس کا بندوبست بھی مارچ کی انتظامیہ کرے گی۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *