جامعہ اردو : کووڈ کے باوجود متنازعہ سلیکشن بورڈ 2017 منعقد کرنے کی تیاری

کراچی : وفاقی اردو یونیورسٹی میں کووڈ 19 کی خلاف ورزی کرتے ہوئے چار سال بعد 2017 کا سلیکشن بورڈ منعقد کروانے کا فیصلہ  کر لیا گیا ہے ۔

وفاقی اردو یونیورسٹی میں گزشتہ ایک سال سے زائد عرصے میں کیمپس میں تعلیمی مکمل سرگرمیاں معطل ہیں ۔ اسی دوران کوووڈ 19 کی وجہ سے 27 اپریل کو منعقد ہونے والا اجلاس بھی غیر معینہ مدت کے لئے موخر کر دیا گیا ہے ۔

تاہم دوسری جانب چار سال بعد 2017 کے سلیکشن بورڈ کے انعقاد کے لئے سینکڑوں افراد کو ذاتی طور پر انترویو کے لئے پیش ہونے کے لئے کہہ دیا گیا یے ۔ دوسری ظرف یونیورسٹی میں پاک فوج کے جوانوں نے بھی کیمپ آفس قائم کر لیا ہے تاکہ شہر بھر میں کورونا کی حکومتی ہدایات پر عمل درآمد کروایا جا سکے ۔

مذید پڑھیں :HEC کا سوشل میڈیا پر غیر منظور شدہ میرٹ لسٹ کی تشہیر پر اظہار تشویش

یونیورسٹی کے متعدد سینیٹرز نے قائم مقام انتظامیہ سمیت ڈپٹی چیئر سینیٹ اے کیو خلیل کو ایک خط کے ذریعے یہ مشورہ دیا ہے کہ وہ قانونی تقاضے پورے کئے بغیر سلیکشن بورڈ منعقد کروانے میں جلد بازی سے کام نہ لیں ۔تاہم اس کے باوجود بھی قائم مقام وائس چانسلر ڈاکٹر روبینہ مشتاق کی جانب سے سینکڑوں افراد کو 29 اپریل سے انٹرویو کے لئے طلب کیا گیا ہے ۔

اس سے قبل یونیورسٹی کے اساتذہ نے 2017 کے سلیکشن بورڈ کے انعقاد سے قبل 2013 کا سلیکشن بورڈ منعقد کروانے کا مطالبہ کیا تھا ۔ اساتذہ کا کہنا ہے کہ 2017 کا سلیکشن بورڈ پہلے منعقد ہونے سے سنیارٹی کے مسائل پیدا ہوں گے ۔

مذید پڑھیں :جامعہ اردو : خُرم مشتاق کی ترقی کیخلاف ملازمین میں سخت اشتعال

واضح رہے کہ وائس چانسلر ڈاکٹر روبینہ مشتاق ، رجسٹرار ڈاکٹر صارم ، ٹریژرار دانش احسان سمیت دیگر کو نوازنے کے لئے مذکورہ سلیکشن بورڈ کیا جا رہا ہے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *