قاری عثمان ایک اور مسجد بچانے کیلئے میدان میں آ گئے

کراچی : جمعیت علمائے اسلام کے رہنما قاری محمد عثمان کراچی کی ایک اور مسجد بچانے کے لئے میدان میں آ گئے ہیں ۔ اس سے قبل قاری محمد عثمان کی وجہ سے کراچی کی کئی شہید کردہ مساجد دوبارہ تعمیر ہو چکی ہیں ۔

جمعیت علماء اسلام پاکستان کے رہنماء قاری محمد عثمان نے کہا کہ گزشتہ 22 سال سے قائم رجسٹرڈ مسجد بلال کو شہید کرنا دین دشمنی کی انتہاء ہے۔ اگر باقی مصلے کو کسی نے ہاتھ لگایا تو ہماری لاشوں پر سے گزرنا ہو گا ۔ بد قسمتی سے اسلام کے نام پر حاصل کئے گئے ملک میں مسجد اور شعائر اسلام غیر محفوظ ہیں ۔ 22 سال سے قائم مسجد بلال اور 32 سال سے قائم مدرسہ اشاعت القران کا انہدام لمحہ فکریہ اور آئین پاکستان سے بغاوت ہے ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی آئی بی کالونی پریس کوارٹر میں شہید مسجد بلال اور مدرسہ اشاعت القرآن کے ملبے پر نماز عصر کی ادائیگی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ قاری محمد عثمان نے کہا کہ پی آئی بی کالونی پریس کوارٹر میں رمضان کے مبارک مہینے میں پرنٹنگ پریس کے متعصب و ملحد جنرل مینیجر مظفر حسین چانڈیو نے 22 سال سے قائم شدہ بلال مسجد اور 32 سال سے قائم شدہ مدرسہ اشاعت القران کو بلڈوز کر کے نمازیوں کو نماز اور تراویح پڑھنے سے روک دیا ۔

مذید پڑھیں :مفتی تقی عثمانی سے منسوب ’’ کرونا علاج خوشخبری ‘‘ کی تردید

22 سال سے تروایح کی نماز یہاں ہورہی ہے، امسال بھی 6 روزہ تراویح کا اہتمام تھا۔ ملبے کے ڈھیر میں درجنوں قرآن مجید کے نسخے اب بھی ملبے تلے دبے ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مظفر حسین چانڈیو نامی بدبخت پریس مینیجر جو کہ جعلی ڈگری ہولڈر بھی ہے نے محض دین دشمنی میں مسجد کو شہید کروایا ۔

مظفر حسین چانڈیو نے پریس کے اندر کی مسجد میں آذان پر بھی پابندی لگائی ہوئی ہے۔ قاری محمد عثمان نے کہا کہ اہلیان علاقہ کا مطالبہ ہے کہ مظفر حسین چانڈیو نامی 12 سال سے قابض سرکاری افسر کو فوری ہٹاکر مسجد اور مدرسے کو ڈھانے اور قرآن کریم کی بیحرمتی پر ایف آئی آر کاٹی جائے۔ شہید کی گئی مسجد کو فوری طور پر تعمیر کیا جائے ۔

انہوں نے خبردار کرتے ہوئے کہا کہ اگر مسجد کی فوری تعمیر شروع نہ کی گئی تو اپنی مدد آپ کے تحت کراچی کے شہری مسجد کی تعمیر شروع کر دیں گے ۔ انہوں نے علاقہ کے صاحب خیر حضرات سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ اللہ کے گھر کی تعمیر میں پہلے آنے اور پہلے پانے کے جذبے سے میدان میں آئیں اور شہید کی جانے والے مسجد کی تعمیر میں اپنا حصہ ڈالیں، دین دشمن متعصبانہ سوچ رکھنے والے بدبختوں کے عزائم کو خاک میں ملا دیں۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *