ضمنی الیکشن 249 میں قواعد کی خلاف ورزی پر ECP تماشائی

کراچی : قومی اسمبلی میں حلقہ این اے 249 میں ضمنی الیکشن کے قوائد و ضوابط کی خلاف ورزی پر الیکشن کمیشن خاموش تماشائی بن گیا ہے ۔

الیکشن کمیشن کے قواعط و ضوابط کے مطابق صوبائی و قومی اسمبلی کے ممبران حلقے میں مہم نہیں چلا سکتے ۔ الیکشن کے دوران ترقیاتی کاموں پر بھی پابندی ھوتی ہے ۔ لیکن حلقہ 249 میں ترقیاتی کام بھی ہو رہے ہیں اور اسمبلی ممبران پر بھی حلقے میں موجود ہیں ۔

پاکستان پیپلز پارٹی این اے 249 میں عوام کا ووٹ خریدنے کیلئے ترقیاتی کام کروا رہی ہے ۔ جو سرا سر الیکشن کمیشن کے رول کی خلاف ورزی ہے ۔

مزید پڑھیں :وفاق المدارس نے 4 لاکھ 3 ہزار 42 طلبہ کے نتائج کا اعلان کر دیا

پاکستان پیپلز پارٹی ابھی کیوں کام کروا رہی ہے ۔ جو عوام کو دیکھا سکے ۔ آصف زرداری نے پانچ سال حکومت کی ہے اور سندھ میں تو پندرہ سال سے پاکستان پیپلز پارٹی کی حکومت ہے ۔ لیکن اس دوران انھوں نے اگر کوئی نام کمایا ہے تو مسٹر ٹین پرسنٹ کا ہے ۔

اہل علاقہ کا کہنا ہے کہ غیر منتخب لوگوں کے ذریعے ترقیاتی کام کروا کر عوام کو خریدنے کی کوشش کی جا رہی ہے ۔ یہ ترقیاتی فنڈ منتخب لوکل نمائندوں کو کیوں نہیں دیا گیا ؟ ۔ کیا یہ حلقہ اس وقت پاکستان میں شامل نہیں ھوا تھا ۔ ؟ پندرہ سالوں سے عوام کو پانی جیسی بنیادی حق سے محروم کیوں رکھا گیا ؟ کیا یہ حلقہ کے عوام کیساتھ ظلم نہیں تھا ؟ پیپلز پارٹی پی ڈی ایم سے غداری کی وجہ سے ہوا ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *