ایدھی فاؤنڈیشن نے کتوں کی نسل کشی کا آسان حل نکال لیا . رپورٹ

پورٹ : بابر علی اعوان

کراچی شہر میں کتوں کا راج ہے یہ کہنا غلط نہیں ہو گا ،رواں برس صرف کراچی شہر میں 6 ہزار سے زائد افراد کو کتے کاٹ چکے ہیں .‎ شہریوں کو آوارہ کتوں سے بچانے کےلئے ایدھی فاؤنڈیشن آئندہ ماہ کتوں کی نس بندی کرے گی .جس کے لئے پورے شہر میں کیمپ لگائے جائیں گے ۔

‎حکومتی اداروں کی جانب سے کتوں کے خاتمے کے اقدامات نہ ہونے پر ایدھی فاؤنڈیشن نےشہریوں کو کتے کے کاٹے سے بچانے کےلئے کتوں کو پکڑنا شروع کر دیا ہے ۔‎جمعہ کو ایدھی فاؤنڈیشن نے سٹی کورٹ کےاندراور اطراف سے 15 سے زائد آوارہ کتے پکڑے جس کے بعد انہیں نس بندی کے لئے لے جایا گیا ہے ۔

‎ایدھی فاؤنڈیشن کے نمائندے سعد ایدھی نے جنگ اخبار کے نمائندے کو بتایا کہ ابتدائی طور اسکولوں ، کالجوں،جامعات ، سرکاری دفاتر، پارکس اور عوامی مقامات سے کتوں کو پکڑ کر ویکسینیشن کرر ہے ہیں ۔‎ان کا کہنا تھا کہ آئندہ ماہ کے وسط سے کتوں کی باقائدہ نس بندی کی جائے گی جس کےلئے عملے کو تربیت دی جارہی ہے ۔

‎انہوں نے بتایا کہ ایدھی فاؤنڈیشن کے پاس جانوروں کے 3 ڈاکٹر بھی موجود ہیں جو ایک ٹیم کی صورت میں مختلف ایام کے دوران پورے شہر میں کیمپ لگائیں گے اور نس بندی کریں گے ۔

‎واضح رہے کہ سندھ کے آوارہ کتوں نے رواں سال لاکھوں افراد کو کاٹا جن میں سے درجنوں ہلاک ہو گئے۔ صوبائی محکمہ صحت نے ایک لاکھ 86 ہزار کیسز اور 9 ہلاکتوں کی تصدیق کی ہے ۔ماہرین صحت کے مطابق یہ وہ کیسز ہیں جو رپورٹ ہوئے ہیں ، رپورٹ نہ ہونے والے کیسز اور ہلاکتوں کی تعداد اس سے زیادہ ہے ۔

محکمہ صحت سندھ کے اعداد و شمار کے مطابق رواں برس کے پہلے پانچ ماہ میں 69 ہزار سے زیادہ کتے کے کاٹے کے کیسز رپورٹ ہوئے جن میں سب سے زیادہ واقعات لاڑکانہ اور سب سے کم کراچی ڈویژن میں رپورٹ ہوئے ہیں ۔ لاڑکانہ ڈویژن میں کتے کاٹے کے کیسز کی تعداد 22 ہزار 822 ہے ، حیدرآباد ڈویژن میں لگ بھگ 21 ہزار، شہید بینظیر آباد ڈویژن میں 12 ہزار سے زیادہ ، میر پور خاص ڈویژن میں چھ ہزار 774 اور کراچی ڈویژن میں 320 واقعات پیش آئے ہیں۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *